منگل , 25 جنوری 2022

شدید گرمی سے بچنے کیلئے عمارتوں کے تخیلاتی ڈیزائن

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)گرمی کی شدت کا مقابلہ کرنے کے لیے لوگ کیا کچھ نہیں کرتے۔ ٹھنڈا ٹھار پانی پیتے ہیں، ائیر کنڈیشن لگواتے ہیں اور ٹھنڈے مقامات کا رخ کرتے ہیں۔ غرض یہ کہ اپنی اپنی بساط کے مطابق جس سے جو کچھ بن پڑتا ہے وہ کرتے ہیں۔کچھ لوگو ں نے عملی طور پر تو کچھ بھی نہیں کیا لیکن گرمی کی شدت کا مقابلہ کرنے کے لیے تخیل کا سہارا لیتے ہوئے گھروں کے ایسے ڈیزائن تیار کیے جو گرمی کے موسم میں حدت کی شدت سے بچنے کے لیے تقریباً ہر ایک کی خواہش ہو سکتے ہیں۔

جیسے کہ سمندر کنارے ایک گھر، گھر کی چھت پر ایک سوئمنگ پول، سمندر کی یخ بستہ گہرائیوں میں ایک گھر۔ انہیں سوچ کر ہی آدھی گرمی ختم ہو جاتی ہے۔اینٹی ریئلٹی یعنی حقیقت کے برعکس، ایک تخیلاتی پیج نے ایسی ہی جگہوں کا تصور پیش کیا ہے۔ایک تصوراتی گھر جس کا نام سمر ہاؤس رکھا گیا ہے۔ اس گھر کی پیالہ نما چھت بطور سوئمنگ پول استعمال ہو سکتی ہے۔ اس میں بیٹھ کر آپ تپتے ہوئے سورج میں تیراکی کریں اور ساتھ میں سمندر کا نظارہ بھی کریں۔

اینٹی ریئلٹی کے ایڈمن کے مطابق انہوں نے چھت کے عام استعمال کے برعکس الٹ استعمال کا تصور دیا ہے۔ اس گھر میں 3 کمرے ہیں جن میں ایک کچن، ایک باتھ روم اور ایک رہائش کا کمرہ ہے۔اینٹی ریئلٹی نے صرف یہ ایک نہیں بلکہ کئی تخیلاتی ڈیزائن پیش کیے ہیں۔

یہ تمام ڈیزائن ایسے ہیں جنہیں دیکھ کر ہی ٹھنڈک کا احساس ہوتا ہے، اب ذرا سوچیں کہ اگر یہ حقیقت کا روپ ڈھال لیں تو کیسی گرمی اور کہاں کی گرمی۔ان ڈیزائنز میں ایک بات عام ہے کہ یہ تخیلاتی عمارتیں سمندر کے کنارے بنائی گئی ہیں۔

اینٹی ریئلٹی کے ایڈمن کا کہنا ہے کہ یہ ڈیزائن بناتے وقت خیال رکھا گیا کہ ان میں سے کوئی بھی تصور پہلے سے موجود نہ ہو اور حقیقت کے برعکس ہو۔ یہ ڈیزائن کمپیوٹر سوفٹ ویئر کی مدد سے تیار کیے گئے ہیں۔اب یہ ڈیزائن حقیقت کا روپ ڈھال بھی سکتے ہیں یا صرف یہ ایک خوبصورت تخیل ہی ہیں اس کا بارے میں تو کوئی انجینئر ہی اپنی رائے دے سکتا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

دوحہ: کنٹینروں سے فٹبال اسٹیڈیم بنا لیا گیا

دوحہ: اسپین کی ایک تعمیراتی کمپنی نے فیفا ورلڈ کپ 2022 کےلیے دوحہ، قطر میں …