ہفتہ , 16 اکتوبر 2021

‘جنگ کی صورت میں اسرائیل کا صحت کا شعبہ تباہ ہو سکتا ہے’

یروشلم (مانیٹرنگ ڈیسک)اسرائیل کے سیکیورٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ مستقبل میں جنگ کی صورت میں اسرائیل کا صحت کا شعبہ تباہی سے دوچار ہو سکتا ہے۔عبرانی اخبار ‘ہارٹز’ کی رپورٹ‌ میں بتایا گیا ہے کہ لبنانی مزاحمتی تنظیم ‘حزب اللہ’ اور فلسطینی مزاحمتی تنظیموں کی طرف سے کی طرف سے جنگ کی صورت میں اسرائیل کا داخلی ہیلتھ سسٹم ناکام ہوسکتا ہے۔اخبار نے اسرائیل کے سیکیورٹی ڈھانچے کے ایک عہدیدار کے حوالے سے بتایا ہے کہ جنگ کی صورت میں زخمیوں کو محفوظ مقامات یا اسپتالوں میں منتقل کرنا زیادہ مشکل اور پیچیدہ ہو سکتا ہے۔ اس کی وجہ دشمن کے اسلحہ کے معیار میں ترقی اور اس کی جدید خصوصیات بتایا جاتا ہے۔

اسی عہدیدار کا کہنا ہے کہ اسرائیل کے پاس ایمبولینسوں‌ کی قلت ہے اور اس قلت کا تناسب 30 فی صد تک ہے جب کہ فوجی شعبے میں ایمبولینسوں‌ کی قلت 20 فی صد تک ہے۔اخباری رپورٹ کے مطابق جنگ کی صورت میں اسرائیل کا شعبہ حادثات بھی جنگ کی صورت میں متاثر ہوسکتا ہے۔ بہت زیادہ رش کی صورت میں اسرائیلی ہنگامی طبی سروسز کو مشکلات کا سامنا ہوسکتا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

ایرانی و ہندوستانی وزرائے خارجہ کی ملاقات، باہمی تعاون کے مزید فروغ کے لئے پر عزم

نیویارک: اسلامی جمہوریہ ایران اور ہندوستان کے وزرائے خارجہ کے درمیان اقوام متحدہ کی جنرل …