جمعرات , 27 جنوری 2022

نتنیاہو کے دورہ الخلیل کے موقع پر بڑی تعداد میں صیہونی فوجی تعینات

مقبوضہ بیت المقدس (مانیٹرنگ ڈیسک)غرب اردن کے شہر الخلیل میں صیہونی حکومت کے وزیراعظم نتنیاہو کے دورے سے قبل غاصب صیہونی حکومت کے فوجی بڑی تعداد میں اس علاقے میں تعینات ہوگئے ہیں تاکہ فلسطینیوں کے ہر طرح کے مظاہرے کو ناکام بناسکیں۔

فلسطین انفارمیشن سینٹر کی رپورٹ کےمطابق صیہونی حکومت کا وزیراعظم نتنیا ہو اپنی انتخابی مہم اور غرب اردن میں بسائے گئے صیہونیوں کے ووٹ حاصل کرنے کی غرض سے بدھ کو اس علاقے کا دورہ کررہا ہے جہاں وہ الخلیل شہر کا دورہ کرنے کے ساتھ ساتھ حرم ابراہیمی کے تقدس کو بھی پامال کرنے کی کوشش کرے گا۔ غرب اردن کے علاقے کے فلسطینی شہری نتنیاہو کے دورہ الخلیل سے سخت ناراض ہیں اور ان کا کہنا ہے کہ وہ اس دورے کے خلاف مظاہرے کریں گے۔

الخلیل شہر کے ادارہ اوقاف نے نتنیاہو کے دورہ الخلیل پراپنا ردعمل ظاہرکرتے ہوئے کہا ہےکہ نتنیاہو کا یہ اقدام سن دوہزار میں صیہونی حکومت کے سابق وزیراعظم اریل شارون کے دورہ بیت المقدس کی یاد دلاتا ہے۔ الخلیل شہر کے ادارہ اوقاف نے فلسطینیوں سے کہا کہ وہ الخلیل میں حرم ابراہیمی کی حفاظت کریں۔ سن دوہزار میں اریل شارون کے ذریعے بیت المقدس میں مسجد الاقصی کی بے حرمتی کئے جانے خلاف دوسری تحریک انتفاضہ شروع ہوگئی تھی۔

یہ بھی دیکھیں

عرب امارات میں سرمایہ کاری صفر ہوجائے گی، یمنی رہنما کا سخت انتباہ

صنعا: یمن کی اعلی سیاسی کونسل کے سینیئر رکن محمد البخیتی نے بیرونی سرمایہ کاروں …