جمعرات , 27 جنوری 2022

ہم ترکی کو اسلحہ دینے کے لئے تیار ہیں: جمیز جیفری

ترکی کی فوج زیادہ تر ہمارا تیار کردہ فوجی سامان استعمال کر رہی ہے۔ اگر ترکی کو ضرورت پڑی تو ہم اسے ایمونیشن اور دیگر فوجی سامان فراہم کرنے کے لئے تیار ہیں: جیمز جیفری۔امریکہ کے شام کے لئے نمائندہ خصوصی جمیز جیفری نے کہا ہے کہ ہم ترکی کو ایمونیشن کی فراہمی کے لئے تیار ہیں۔جمیز جیفری اور امریکہ کے انقرہ کے لئے سفیر ڈیوڈ سیٹرفیلڈ نے شام میں اسد انتظامیہ کے حملوں سے بچ کر ترکی آنے والے مہاجرین کے کیمپوں  کا دورہ کیا اور اخباری نمائندوں کے سوالات کے جواب دئیے۔اس سوال کے جواب میں کہ نیٹو کے پلیٹ فورم سےامریکہ ترکی کی کیسے مدد کر سکتا ہے؟ جمیز جیفری نے کہا ہے کہ "ترکی ایک نیٹو رکن ہے اور اس کی فوج زیادہ تر ہمارا تیار کردہ فوجی سامان استعمال کر رہی ہے۔ اگر ترکی کو ضرورت پڑی تو ہم اسے ایمونیشن اور دیگر فوجی سامان فراہم کرنے کے لئے تیار ہیں”۔

جیفری نے کہا ہے کہ ہم ترکی کے ساتھ خبروں کا تبادلہ کر رہے ہیں اور سفارتی  حیثیت سے بھی اس کے ساتھ تعاون کر رہے ہیں۔جیفری نے شامی انتظامیہ کے ادلب حملوں کو مکمل طور پر شیطانی قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ "اسد انتظامیہ لاکھوں شہریوں کو ادلب سے نکالنے کے لئے غیر اخلاقی پالیسی پر عمل پیرا ہے”۔انہوں نے کہا ہے کہ "شامی انتظامیہ کا مقصد ادلب کی آبادیاتی ساخت کو تبدیل کرنا ہے۔  اس وقت علاقے میں اسد کی جارحیت   ہمیشہ سے کہیں زیادہ خطرناک ہے”۔

یہ بھی دیکھیں

عرب امارات میں سرمایہ کاری صفر ہوجائے گی، یمنی رہنما کا سخت انتباہ

صنعا: یمن کی اعلی سیاسی کونسل کے سینیئر رکن محمد البخیتی نے بیرونی سرمایہ کاروں …