بدھ , 10 اگست 2022
تازہ ترین

عراقی عوام کاحکومت سے امریکی فوج کے خلاف فوری کارروائی کا مطالبہ

عراقی عوام نے حکومت سے امریکی دہشت گرد افواج کو فوری طورپر ملک بدر کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔تسنیم خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق، عراق کی فوج اور سیاسی و مذہبی جماعتوں کی جانب سے الحشد الشعبی کے مراکز پر امریکی جارحیت کی مذمت کی ہے اورکہا ہے کہ عراقی حکومت اور پارلیمنٹ امریکی جارحیت کے خلاف سخت کارروائی کرے۔عراقی ذرائع کا کہنا ہے کہ عراقی پارلیمنٹ کے اسپیکر حمد الحلبوسی نے امریکی دہشتگردانہ حملے کے خلاف اس ملک کی سیاسی جماعتوں کے رہنماوں کے فوری اجلاس بلانے اور عراق سے امریکی فوجیوں کے فوری انخلا کا مطالبہ کیا۔

عراق کی مسلح افواج نے بھی عراق میں عوامی رضاکار فورس الحشد الشعبی کے مراکز پر امریکی جنگی طیاروں کے حملے پہلے عراقی اور امریکی حکام کے مابین ہونے والی ہم آہنگی اور گفتگو سے متعلق امریکی دعووں کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئےالحشد الشعبی کے مراکز پر امریکی جنگی طیاروں کے حملے کو کھلی جارحیت قرار دیا۔عراقی پارلیمنٹ میں الفتح اتحاد اور مجلس اعلائے اسلامی نے علیحدہ علیحدہ بیان میں عوامی رضاکار فورس الحشد الشعبی کے مراکز پر امریکی جنگی طیاروں کے حملے کی مذمت کرتے ہوئے اسے بزدلانہ اقدام قرار دیا۔

عراقی حزب اللہ کے ترجمان محمد محیی نے کہا ہے کہ امریکہ مختلف حیلے بہانوں سے عراق میں اپنی فوجی موجودگی کے درپے ہے۔ عراق کی متعدد شخصیات نے بھی الحشد الشعبی کے مراکز پر امریکی جارحیت کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ واشنگٹن عراق میں فوجی کودتا کرنے کی کوشش میں ہے۔واضح رہے کہ امریکہ کے جنگی طیاروں نے جمعرات کی رات عراق کے صوبوں صلاح الدین، بابل، بصره، کربلا اور واسط میں عوامی رضاکار فورس الحشد الشعبی کےکئی مراکز پر حملہ کیا۔ عراقی ذرائع کا کہنا ہے کہ امریکی جارحیت میں 3 افراد شہید اور 7 زخمی ہوئے۔

رائٹرز نے امریکی حکام کے حوالے سے دعوی کیا ہے کہ امریکی حملہ بدھ کی رات امریکہ کے فوجی اڈے التاجی میں ہونے والے راکٹ حملے پر کیا گیا۔ التاجی حملے میں امریکہ اور برطانیہ کے 4 فوجی ہلاک اور 26 دیگر فوجی زخمی ہوئےتھے۔واضح رہے کہ عراق کے القائم علاقہ میں دو ماہ قبل بھی امریکہ کے ہوائی حملوں کے نتیجے میں عراق کی رضاکار فورس کے 25 افراد شہید اور51 زخمی ہوئےتھے۔ الحشد الشعبی کے اہلکاروں کی شہادت کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے مظاہرین نے عراق کے دارالحکومت بغداد میں امریکی سفارتخانے پر حملہ کرکے امریکی پرچم کو نذر آتش کیا جبکہ امریکی سفارتخانہ سےمظاہرین پر آنسوگیس کی شیلنگ کی گئی ۔حشد الشعبی کے اہلکاروں کی شہادت کے بعد عراقی عوام میں امریکہ کی نسبت شدید غم و غصہ پایا جاتا ہے دارالحکومت بغداد میں ہزاروں افراد نے امریکہ سے نفرت اور بیزاری کا اظہار کرتے ہوئے عراق میں امریکی سفارتخانہ کو بند کرنے کا مطالبہ کیا۔

یہ بھی دیکھیں

بھارت بارشوں اور سیلاب سے ہلاکتوں کی تعداد 73 ہوگئی

نئی دہلی: بھارتی ریاست کرناٹک میں موسلادھار بارشوں اور سیلاب سے ہونے والی ہلاکتوں کی …