اتوار , 28 نومبر 2021

افغانستان کا افغانی داعشی ونگ کے سربراہ اسلم فاروقی کو پاکستان کے حوالے کرنے سے انکار

افغانستان نے دہشت گرد اور آئی ایس آئی آیس خراسان کے سربراہ اسلم فاروقی کو پاکستان کے حوالے کرنے سے انکار کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ترجمان افغان وزارت خارجہ نے دہشت گرد عبداللہ اورکزئی عرف اسلم فاروقی کے حوالے سے جاری بیان میں کہا کہ پاکستانی حکومت نے افغانستان سے اسلم فاروقی کی حوالگی کا مطالبہ کیا تھا لیکن افغانستان نے دہشت گرد اور آئی ایس آئی آیس خراسان کے سربراہ کو پاکستان کے حوالے کرنے سے انکار کر دیا کیونکہ اسلم فاروقی داعش کا سربراہ ہے جو افغانستان میں بہت سے جرائم میں ملوث ہے۔ترجمان افغان وزارت خارجہ نے کہا کہ اسلم فاروقی پر بہت سے حملوں کا الزام ہے جس میں بہت سے افغان شہری اور فوجی جاں بحق ہوئے اور ان کے ساتھ افغانستان کے قوانین کے تحت سلوک کیا جائے گا۔ترجمان افغان وزارت خارجہ نے یہ بھی کہا کہ افغانستان دہشت گردوں کے خلاف امتیاز نہیں برتتا اور اس کو غیر قانونی قرار دیتا ہے اس لیے اسلم فاروقی کیساتھ افغانستان کے قوانین کے مطابق سلوک کیا جائے گا۔اپنے بیان میں افغان وزارت خارجہ کے ترجمان کا کہنا تھا کہ افغانستان اور پاکستان کے درمیان مجرموں اور جرائم پیشہ افراد کے تبادلے کا معاہدہ موجود نہیں ہے۔

افغان وزارت خارجہ کے ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ دونوں ممالک مشترکہ سیکورٹی و امن پلان کے تحت معلومات پر تبادلہ کر سکتے ہیں، اس سےدہشت گردی کے خلاف جنگ میں مدد ملے گی۔یاد رہے اس سے قبل پاکستان نے افغانستان سے آئی ایس آئی ایس لیڈر اسلم فاروقی کی حوالگی کا مطالبہ کیا تھا۔ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر عائشہ فاروقی کے مطابق افغان سفیر کو دفتر خارجہ طلب کیا گیا اور پاکستان نے آئی ایس آئی ایس لیڈر اسلم فاروقی کی گرفتاری پراپنے موقف سے آگاہ کیا تھا۔

یہ بھی دیکھیں

لبنان کو ایرانی تیل کی ترسیل کا سلسلہ جاری

تہران: ایرانی ایندھن کا حامل ایک اور کاروان شام کے راستے لبنان میں داخل ہو …