اتوار , 28 نومبر 2021

شہید جنرل قاسم سلیمانی کا شہادت سے پہلے فلسطینی رہنماوں کو دیا گیا پیغام سامنے آ گیا

ایرانی پاسداران انقلاب کے قدس فورس کے شہید کمانڈر ، جنرل قاسم سلیمانی نے ، حماس کے فوجی دستہ قدس بریگیڈ کے کمانڈر ، محمد دھاف کو ، اپنی شہادت سے قبل ایک پیغام بھیجا تھا۔ لبنان کے المیادین ٹی وی نے اپنی ایک خصوصی رپورٹ میں یہ انکشاف کیا ہے کہ شہید جنرل سلیمانی نے محمد دھاف کو ایک پیغام بھیجا تھا جس میں انہوں نے کہا تھا کہ "ایران کبھی بھی فلسطین کو تنہا نہیں چھوڑے گا ، چاہے دباؤ کتنا ہی بڑا ہو کتنا ہی سخت محاصرہ کیوں نہ ہو ایران فلسطین کو کبھی تنہا نہیں چھوڑے گا۔

شہید جنرل سلیمانی نے محمد دھاف کو "زندہ شہید اور بہادر مزاحمت کار” قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ وہ "سب کو یقین دلاتا ہے کہ ایران فلسطین کو تنہا نہیں چھوڑے گا۔” اپنے پیغام میں ، جنرل قاسم سلیمانی نے محمد دھاف کو مخاطب کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ حماس کے پولیٹیکل بیورو کے سربراہ ، اسماعیل ہنیہ کی سلامتی کے لیے دُعا گو ہے۔ قاسم سلیمانی نے اسماعیل ہنیہ کو ایک ” بہادر مزاحمتی مجاہد” قرار دیتے ہوئے ، اس بات پر زور دیا تھا کہ فلسطین کا دفاع کرنا ہمارے لئے اعزاز کی بات ہے اور ہم دنیا کی ہر طرح کی خوشی کو فلسطین پر قربان کرنے کے لیے تیار ہیں۔  انہوں نے کہا تھا  فلسطین کے دوست ہمارے دوست ہیں اور فلسطین کے دشمن ہمارے دشمن ہیں۔ایران کی سابقہ ​​پالیسی یہی تھی، ہیں اور یہی پالیسی باقی رہے گی۔ ”

سلیمانی نے القسام بریگیڈ کے رہنما کو دیئے گئے پیغام کے آخر میں کہا تھا کہ  "مجھے امید ہے کہ خدا آپ کی مدد کرنے میں ہماری مدد کرے گا ، اور ہمیں فلسطین کی خاطر جدو جہد کرتے ہوئے شہادت نصیب کریگا۔” یاد رہے ایرانی قدس فورس کا کمانڈر میجر جنرل قاسم سلیمانی 3 جنوری کو بغداد کے بین الاقوامی ہوائی اڈے کے قریب امریکی ڈرون حملے میں شہید ہوئے تھے۔

 

 

 

 

 

 

 

یہ بھی دیکھیں

لبنان کو ایرانی تیل کی ترسیل کا سلسلہ جاری

تہران: ایرانی ایندھن کا حامل ایک اور کاروان شام کے راستے لبنان میں داخل ہو …