بدھ , 19 جنوری 2022

صحافی خاشقجی کے بیٹوں نے دباو میں آکر قاتل سعودی ولی عہد محمد بن سلمان اور دیگر کو معاف کر دیا

ریاض:،مقتول صحافی جمال خاشقجی کے بیٹوں نے دباو میں آکر قاتل سعودی ولی عہد اور دیگر کو معاف کر دیا ہے۔تفصیلات کے مطابق سعودی عرب کے دباؤ کی وجہ سے صحافی جمال خاشقجی کے بیٹوں نے اپنے والد کے قاتلوں کو معاف کردیا ہے۔جمال خاشقجی کے دونوں بیٹے سعودی عرب میں ہی مقیم ہیں اور ان پر اپنے والد کے قاتلوں کو معاف کرنے کے لئے سخت دباو تھا۔ سعودی عرب میں مقیم جمال خاشقجی کے بیٹوں صالح اور عبداللہ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ رمضان کی مقدس شب انہوں نے اپنے والد کے قاتل سعودی ولی عہد بن سلمان اور دیگر کو معاف کر دیا ہے۔

واضح رہے کہ امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ کے صحافی اور سعودی ولی عہد بن سلمان کے مخالف سعودی صحافی اور نقاد جمال خاشقجی کو دو اکتوبر کو ترکی کے شہر استنبول میں سعودی عرب کے قونصل خانے میں نہایت بے دردی سے قتل کرکے ان کی لاش ٹکڑے ٹکڑے کردی گئی تھی۔سعودی حکومت اٹھارہ روز تک خاموش یا قتل سے انکار کرتی رہی یہاں تک کہ ترکی کی انٹیلی جینس اور سی آئی اے نے اس بات کی تائید کردی کہ جمال خاشقجی کو سعودی ولی عہد بن سلمان کے حکم پر قتل کیا گیا ہے۔

سعودی عرب کی عدلیہ نے دسمبر 2019 کو خاشقجی قتل کیس کا فیصلہ سناتے ہوئ ےقتل میں ملوث پانچ افراد کو سزائے موت اور تین افراد کو قید کی سزا سنائی۔واضح رہے کہ جمال خاشقجی کے دونوں بیٹے سعودی عرب میں ہی مقیم ہیں اور ان پر اپنے والد کے قاتلوں کو معاف کرنے کے لئے سخت دباو تھا۔

یہ بھی دیکھیں

صنعا پر جارح سعودی اتحاد کی وحشیانہ بمباری، بارہ شہید، گیارہ زخمی

صنعا: جارح سعودی اتحاد کے بمبار جہازوں نے پیر کی شام کو صوبے صنعاء کے …