اتوار , 20 جون 2021

داعش کی جانب سے تیار کردہ غیر قانونی دوا پکڑی گئی

اٹلی میں پولیس نے اسمگل شدہ ایک ارب یورو مالیت کی قوت بخش ادویات قبضے میں لے لی ہیں۔ابلاغ نیوز نےغیر ملکی میڈیا کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ ‘کیپٹاگون ‘ نامی قوت بخش دوا کی یہ نقل مبینہ طور پر شام میں تیار کی گئی ہیں تاکہ اس کی فروخت سے داعش کی مالی مدد کی جاسکے۔حکام کے مطابق ایک ارب یورو مالیت کی کیپٹاگون نامی دوا کے فارمولے سے تیار کی گئیں کروڑوں گولیاں سیلرنو کی بندرگاہ میں کنٹینرز سے برآمد ہوئی ہیں۔رپورٹ کے مطابق ان گولیوں کا وزن  تقریباً 14 ٹن ہے  جو کہ کاغذ کے ڈرمز اور پہیوں  کے سامان کے ساتھ  چھپائی گئی تھیں۔پولیس کے مطابق اتنی بھاری مقدار میں اسمگل شدہ غیر قانونی دواؤں کا ایک وقت میں پکڑے جانا ایک عالمی ریکارڈ ہے، اس حوالے سے بھی تحقیقات کی جارہی ہیں کہ کہیں ان کا تعلق اٹلی کے مقامی مافیا سے تو نہیں ۔

خیال رہے کہ کیپٹاگون نامی دوا میں  ایمفیٹامین شامل ہوتا ہے جو کہ تحرک میں کمی اور نیند کی خرابی کے شکار افراد کو دی جاتی ہے۔تاہم لت میں مبتلا کردینے کی خاصیت کی وجہ سے اس دوا پر پابندی ہے اور عام طور پر اس کا استعمال غیر قانونی طور پر کیا جاتا ہے اور حالیہ عرصے میں اسے مشرق وسطیٰ اور افریقا میں جنگجوؤں کی جانب سے استعمال کیا جاتا رہا ہے۔جنگجو اس دوا کو خود کو متحرک رکھنے کے لیے استعمال کرتے ہیں اور ان کا کہنا ہے کہ اس کے استعمال سے ان کی  لڑنے کی صلاحیت بڑھتی ہے اور  وہ زیادہ سفاک بھی ہوجاتے ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

کابل میں پھر دھماکے، آٹھ افراد جاں بحق، شیعہ ہزارہ نشانے پر

کابل: افغانستان کے دارالحکومت میں جمعرات کو ہونے والے دو الگ الگ بم دھماکوں میں …