ہفتہ , 16 اکتوبر 2021

ایران نے بھارت کو چاہ بہار ریل منصوبے سے الگ کر دیا ہے

نئی دہلی: خطے میں پڑوسی ممالک کے ساتھ مسائل پیدا کرنے والے ملک بھارت کو بڑا دھچکا لگا ہے، ایران نے بھارت کو چاہ بہار ریل پراجیکٹ سے الگ کر دیا۔ابلاغ نیوز نے بھارتی میڈیا کا حوالہ دیتے ہوئے لکھا ہے کہ  ایران نے بھارت کو چاہ بہار ریل منصوبے سے الگ کر دیا ہے، بھارت کی جانب سے فنڈز کی تاخیر کے باعث ایران کو یہ قدم اٹھانا پڑا، بھارت کو پراجیکٹ سے جدا کرنے کے بعد ایرانی حکومت نے اپنے طور پر ریل لائن کی تعمیر کا فیصلہ کر لیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: امریکی بحری بیڑے میں دھماکہ امریکی دہشت گردی کا جواب ہے؛بریگیڈیئر جنرل اسماعیل قاآنی

ایران اب چاہ بہار ریلوے لائن کو بھارت کے بغیر مکمل کرے گا، بھارت اور ایران کے درمیان یہ معاہدہ 4 سال پہلے طے پایا تھا، منصوبے کے تحت افغان سرحد پر چاہ بہار سے زاہدان تک ریلوے لائن تعمیر ہونی تھی، تاہم بھارت کی جانب سے پروجیکٹ پر کام شروع کرنے اور فنڈز کی فراہمی میں مسلسل تاخیر ہوتی رہی۔ایرانی حکام نے بھارتی میڈیا کو بتایا کہ یہ پراجیکٹ مارچ 2022 تک مکمل ہوگا، اب ایران اس ریلوے لائن کو بھارت کے بغیر مکمل کرے گا۔

ادھر بھارت میں ایران کے فیصلے کے بعد کانگریس رہنما انتہا پسند مودی سرکار پر برس پڑے ہیں، کانگریس رہنما ابھیشیک سنگھوی نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ ایران نے بھارت کو منصوبے سے الگ کیا، یہ ہے مودی کی ڈپلومیسی ؟ یہ بھارت کے لیے بڑا نقصان ہے۔واضح رہے کہ بھارت خطے میں تنہائی کا شکار ہو رہا ہے، پاکستان کے ساتھ لائن آف کنٹرول پر معاہدے کی مسلسل خلاف ورزی سمیت، چین اور دیگر ہمسایہ ممالک کے ساتھ سرحدی تنازعات پر نئی دہلی کی پریشانیوں میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

ایرانی و ہندوستانی وزرائے خارجہ کی ملاقات، باہمی تعاون کے مزید فروغ کے لئے پر عزم

نیویارک: اسلامی جمہوریہ ایران اور ہندوستان کے وزرائے خارجہ کے درمیان اقوام متحدہ کی جنرل …