پیر , 18 اکتوبر 2021

ٹیکسلا میں استانی نے لڑکا بن کر اپنی ہی طالبہ سے شادی کا ڈرامہ رچا لیا

ٹیکسلا میں لڑکا بن کر اپنی ہی طالبہ سے شادی کا ڈرامہ رچانے والی استانی کو عدالت نے طلب کر لیا، دونوں خواتین آج لاہور ہائی کورٹ راولپنڈی بینچ میں پیش ہوں گی۔ابلاغ نیوز کے مطابقٹیکسلا کی رہائشی استانی نےلڑکے کے نام پر جعلی شناختی کارڈ بنوا کراپنی ہی طالبہ سے شادی کا ڈرامہ رچایا۔درخواست گزار کے وکیل آصف اعوان کا میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ لڑکی نے مرد بننے کے لیے اپنا آپریشن کرایا ہے، جنس تبدیلی کے لیے ٹرانس جینڈر ایکٹ موجود ہے۔وکیل نے کہا کہ کہ جہاں آپریشن ہوا ان کے خلاف بھی کارروائی کا حق رکھتے ہیں، جنس تبدیلی سے متعلق ملزم نےکوئی میڈیکل ثبوت پیش نہیں کیا۔

آصف اعوان کا کہنا ہے کہ ملزم نے 29 نومبرکو جنس تبدیلی سے متعلق لوگوں کو بتایا،لڑکا بن کر شادی کرنے والی خاتون اس لڑکی کی ٹیچربھی رہی اور اس کی عمر 29 سال ہے، دونوں کی شادی 20 فروری 2020 کو ایڈیشنل سیشن جج عظیم اختر کی عدالت میں ہوئی۔معاملہ کھلنے پر لڑکی کے والد نے لاہور ہائی کورٹ سے رجوع کیا، عدالت نے دونوں خواتین کو آج طلب کر رکھا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

کئی افرادکی رگیں بہت ابھری ہوئی کیوں ہوتی ہیں؟

ہماری رگیں ایک اسمارٹ نظام کی طرح کام کرتی ہیں جو کہ آکسیجن ملے خون …