منگل , 19 اکتوبر 2021

سوپر پاور امریکا، 4 دن بعد بحری جنگی جہاز کی آگ بجھانے میں کامیاب+ ویڈیو

اتوار کو جنوب مغربی امریکا کی سین ڈیاگو بندرگاہ پر نامعلوم وجوہات سے دھماکہ ہوا تھا اور امریکی بیڑے یو ایس ایس بونہوم رچرڈ میں آگ لگ گئي تھی۔ اس واقعے میں درجنوں امریکی زخمی ہوئے تھے، چار دن کے بعد امریکی انتظامیہ آگ بجھانے میں کامیاب رہی۔امریکہ کے چار سو سے زائد فائر فائیٹرز اس آگ کو بجھانے کی کوشش کر رہے تھے۔

فائر فائٹرز کے علاوہ متعدد امریکی ہیلی کاپٹروں نے بھی بارہ سو سے زائد مرتبہ اس بحری جنگی جہاز پر پانی کے اپنے ٹینک خالی کئے گئے تاکہ کم از کم جہاز کے عرشے کو ٹھنڈا رکھنے کے ساتھ ساتھ فائر بریگیڈ کے اہلکاروں کو عرشے پر اتارا جا سکے۔

امریکی ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ آگ لگنے کے نتیجے میں کم سے کم بحریہ کے پچاس اہلکار بری طرح زخمی ہوئے ہیں۔مذکورہ بحری بیڑے کے کمانڈروں نے اس حادثے کو ایک غمناک ترین حادثہ قرار دیا تھا۔ سن انیس سو اٹھاسی میں امریکی بحریہ میں شامل کئے جانے والے اس بحری جنگی جہاز کی لمبائی تقریبا دو سو ستاون میٹر ہے جس میں لگ بھگ ایک ہزار افراد سرگرم عمل تھے۔

جنرل شہید قاسم سلیمانی کی جگہ قدس بریگيڈ کے کمانڈر بننے والے جنرل اسماعیل قاآنی نے کچھ کمانڈروں سے بات کرتے ہوئے امریکی بیڑے میں آگ لگنے کے واقعے کے بارے میں کہا کہ امریکی بلاوجہ ذمہ داروں کو تلاش کرنے میں وقت ضائع نہ کریں، آگ خود انھوں نے لگائي ہے جس کے شعلے اب خود ان تک پہنچ رہے ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

اسرائیلی انٹیلی جنس موساد کے عہدیدار کے قتل کی CCTV فوٹیج + ویڈیو