جمعرات , 27 جنوری 2022

طبی ہدایات پر عمل نہ کیا گیا تو مستقبل میں تین یا ساڑھے تین کروڑ افراد کورونا میں مبتلا ہو سکتے ہیں؛ ایرانی صدر

تہران: ایرانی صدر مملکت نے تین یا ساڑھے تین کروڑ ایرانیوں کے کورونا سے متاثر ہونے کے امکان سے متعلق وزارت صحت کی رپورٹ کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا کہ اس بیماری کا سلسلہ توڑنےکا واحد راستہ باہمی اور اجتماعی تعاون ہے۔ابلاغ نیوز نے ارنا نیوز کا حوالہ دیتے ہوئے لکھا ہے کہ ایرانی صدر ڈاکٹر حسن روحانی’ نے آج بروز ہفتہ کورونا کے خلاف قومی ہیڈ کوارٹر کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر احتیاطی تدابیر پر عمل نہیں کرتے ہیں تو تین کروڑ تک لوگ کورونا وائرس میں مبتلا ہو سکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کے انفیکشن کے اس تسلسل کو توڑنے کے لیے ضروری ہے کہ ہم باہمی اتحاد کے ساتھ صحت کے اصولوں کو فراموش نہ کریں۔روحانی نے کہا کہ ہمیں پانچ مہینوں سے اس خطرناک وائرس کا سامنا ہے اور ابھی بھی ملک اور بیرون ملک میں اس وائرس کےحوالے سے پریشانیاں موجود ہے کیونکہ ہمارے پاس ابھی بھی بہت سے اقدامات باقی ہیں جو ہمیں اٹھانا ضروری ہیں۔انکا کا یہ بھی کہنا تھا کہ کورونا وائرس کا ابھی تک کوئی حتمی علاج دریافت نہیں ہوا اس سے بچنے کا واحد حل احتیاطی تدابیر پر عمل کرنا ہے

انہوں نے کہا کہ وزارت صحت کے مطابق اب تک ملک کے میں دو لاکھ ستر ہزار افراد کورونا  وائرس کا شکار ہوگئے ہے جن میں سےایک لاکھ تیس ہزار افراد کے لگ بھگ ہسپتال سے رخصت ہوکر گھر میں چلے گئے ہے اور بدقسمتی سے 13 ہزار 800 افراد جاں بحق ہو گئے ہے۔

انہوں نے یہ بھی بتایا ہے کہ کورونا سے متعلق وزارت صحت نے جو رپورٹ پیش کی ہے اس میں اس بات کی نشاندہی کی گئی ہے کہ  اگر مستقبل میں لوگوں نے احتیاطی تدابیر پر عمل نہ کیا تو تین یا ساڑھے تین کروڑ افراد کورونا وائرس کا شکار ہو سکتے ہیں اور یوں اسپتال میں داخل ہونے والوں کی تعداد دوگنی ہو جائےگی۔

 

 

یہ بھی دیکھیں

عرب امارات میں سرمایہ کاری صفر ہوجائے گی، یمنی رہنما کا سخت انتباہ

صنعا: یمن کی اعلی سیاسی کونسل کے سینیئر رکن محمد البخیتی نے بیرونی سرمایہ کاروں …