ہفتہ , 18 ستمبر 2021

امریکہ نے پھر نشہ پی لیا، بولا ایران پر اور پابندیاں لگائیں گے

امریکہ کے وزیر خارجہ کی حیثیت سے آخری ایام بسر کرنے والے مائیک پومپیؤ نے کہا ہے کہ اس ہفتے کے دوران ایران کے خلاف مزید پابندیاں عائد کی جائیں گی۔

رپورٹ کے مطابق پابندیوں کے نشیڑی اور امریکہ کے وزیر خارجہ کی حیثیت سے آخری ایام بسر کرنے والے مائیک پومپیؤ نے وزارت خارجہ کی ویب سائٹ پر جاری کئے جانے والے ایک بیان میں کہا ہے کہ ایران کے خلاف مزید پابندیاں عائد کی جائیں گی۔

امریکہ کے صدارتی انتخابات میں ٹرمپ کی شکست ظاہر ہوتے ہی پریس ذرائع نے اعلان کیا ہے کہ ٹرمپ حکومت، صدارت کی اپنی مدت کے باقی بچے ایام میں ہر ہفتے ایران کے خلاف کوئی نہ کوئی پابندی اور سخت اقدام عمل میں لانا چاہتی ہے۔

اس سے قبل امریکی وزارت خزانہ نے ایران کی کئی شخصیات اور ان سے وابستہ اداروں کے خلاف پابندی عائد کرنے کا اعلان کیا تھا۔

امریکی وزیر خارجہ کا یہ بیان ایسے وقت میں سامنے آیا ہے کہ جب اس سے پہلے امریکا کے قومی سیکورٹی کے مشیر رابرٹ او برائن یہ کہہ چکے ہیں کہ تہران اور ماسکو کے خلاف زیادہ سے زیادہ پابندیوں کی وجہ سے، اب اس سے زیادہ پابندیاں عائد کرنے کا امکان نہیں ہے۔

ایٹمی معاہدے سے علیحدگی اختیار کرنے کے بعد امریکہ کی ٹرمپ حکومت نے ایران کے خلاف زیادہ سے زیادہ دباؤ کی پالیسی اختیار کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ ایران کو مذاکرات پر مجبور کردیں گے۔

جبکہ گزشتہ دو برسوں سے زائد عرصے سے تمام تر کوششوں کے باوجود امریکہ ایران کے خلاف اپنا کوئی مقصد حاصل نہیں سکا ہے اور یہی وجہ ہے کہ ٹرمپ پر خود امریکہ میں بھی کڑی تنقید کی جا رہی ہے۔

یہ بھی دیکھیں

طالبان نے سابق حکمرانوں سے برآمد لاکھوں ڈالر مرکزی بینک میں جمع کرا دیے

کابل: طالبان نے سابق حکومتی عہدیداروں سے برآمد ہونے والے ایک کروڑ 20 لاکھ امریکی …