ہفتہ , 16 اکتوبر 2021

ٹرمپ نے اپنے امریکی بارودی دہشتگردوں کو واپس بلا لیا

لاکھوں عراقیوں اور افغانیوں کے قاتل امریکہ کے باوردی دہشت گردوں نے اپنا بوریا بستر لپیٹنا شروع کردیا ہے۔

 امریکہ کے نائب وزیرجنگ کرسٹوفرمیلر نے کہا ہے کہ عراق اور افغانستان میں تعینات امریکہ کے باوردی دہشت گردوں کا انخلاء آئندہ چند گھنٹوں میں شروع ہوجائے گا۔

انہوں نے ایک پریس کانفرنس سے خطاب کے دوران بتایا کہ دونوں ملکوں میں مجموعی طور پر 5000 ہزار امریکی فوج سے وابستہ باوردی دہشت گرد باقی رہیں گے۔

اس وقت عراق میں امریکہ کے  3200 اور افغانستان میں 4500 باوردی دہشت گرد تعینات ہیں۔

کرسٹو فرمیلر نے اس اقدام کو بیرون ملک تعینات امریکی جنگجووں میں کمی لانے سے متعلق  ٹرمپ کے جراتمندانہ فیصلے سے تعبیر کیا اور کہا کہ عراق اور افغانستان میں امریکہ کے سارے اہداف پورے ہوگئے ہیں۔

امریکہ کے نائب وزیرجنگ کے بیان کے مطابق عراق اور افغانستان میں تعینات باقیماندہ عناصر کو 15 جنوری تک نکال لیا جائے گا۔

اس سے ذرا پہلے بعض امریکی حکام نے خبر دی ہے کہ ٹرمپ سومالیہ سے بھی تمام مسلح امریکیوں کے انخلاء کا ارادہ رکھتے ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

ایرانی و ہندوستانی وزرائے خارجہ کی ملاقات، باہمی تعاون کے مزید فروغ کے لئے پر عزم

نیویارک: اسلامی جمہوریہ ایران اور ہندوستان کے وزرائے خارجہ کے درمیان اقوام متحدہ کی جنرل …