پیر , 25 اکتوبر 2021

پاکستان کی معروف مذہبی اور سیاسی شخصیات کی ایرانی سائنسدان کے قتل کی مذمت

پاکستان کی سیاسی اور مذہبی جماعتوں نے ایرانی سائنسدان محسن فخری زادہ کے صیہونی دہشتگرد عناصر کے ہاتھوں قتل کی مذمت کی۔

مزید اطلاعات کے مطابق مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سیکریٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری ، سربراہ امت واحدہ پاکستان علامہ محمد امین شہیدی ، امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم رحمان، فلسطین فاونڈیشن کے جنرل سیکریٹری صابر ابو مریم، تحریک اسلامی پاکستان کے رہنما علامه سید عابد حسین الحسینی اور ثاقب اکبر سمیت پاکستان کی سیاسی اور مذہبی جماعتوں کے رہنماوں اور اہم شخصیات نے ایران کے نامور سائنسدان محسن فخری زادہ کی اسرائیل اور امریکہ کے ایجنٹوں کے ہاتھوں شہادت کی تعزیت و تسلیت پیش کرتے ہوئے کہا کہ محسن فخری زادہ کو علاقے کے حالات کو خراب کرنے کے مقصد سے قتل کیا گیا۔

اس کے علاوہ پی ٹی ای کی سینئر رہنما اور وفاقی وزیر انسانی حقوق شیر مزاری نے ایرانی سائنسدان کے قتل کو ایک مجرمانہ فعل قرار دیا ہے اور اس کی مذمت بھی کی ہے ۔

پاکستان کی سیاسی اور مذہبی جماعتوں کے رہنماوں نے ریاستی دہشتگردی کے فروغ میں سامراجی طاقتوں اور ان کے کچھ علاقائی اتحادیوں کے کردار کی جانب اشارہ کرتے ہوئے ایرانی سائنسدان کے قتل پر عالمی برادری کی خاموشی پر کڑی نکتہ چینی کی۔

انہوں نے کہا کہ امریکہ اور ناجائز صہیونی حکومت علاقے اور اسلامی ممالک میں عدم استحکام اور بدامنی پھیلانے میں ملوث ہیں۔

پاکستان کی سیاسی اور مذہبی جماعتوں کے رہنماوں نےایرانی سائنسدان کے قتل کو بین الاقوامی قوانین کی کھلی خلاف ورزی قرار دیتے ہوئے کہا کہ افسوس کی بات ہے کہ عالمی تنظیمیں امریکہ اور ناجائز صہیونی ریاست کی جانب سے قانون کی خلاف ورزی کو روکنے میں بے بس ہیں۔

انہوں نے عالم اسلام کی طرف سے امریکہ اور صیہونی حکومت کے غیر قانونی اقدامات کےخلاف متحد ہونے کی ضرورت پر زور دیا۔

یہ بھی دیکھیں

لبنان کو ایرانی تیل کی ترسیل کا سلسلہ جاری

تہران: ایرانی ایندھن کا حامل ایک اور کاروان شام کے راستے لبنان میں داخل ہو …