ہفتہ , 16 اکتوبر 2021

فلسطین عربوں کا نہیں، امت مسلمہ کا مسئلہ ہے، پیر محفوظ مشہدی

جمعیت علمائے پاکستان کے مرکزی رہنما اور مسلم لیگ ن کے پی پی 68 سے ٹکٹ ہولڈر پیر سید محفوظ مشہدی نے زور دیا ہے کہ مسلم ممالک اسرائیل کیخلاف مشترکہ موقف اختیار کریں، اسرائیل تاریخی اور سیاسی اعتبار سے ایک ناجائز ریاست ہے، ہم قبلہ اول پر یہودیوں کا قبضہ تسلیم نہیں کرتے، بیت المقدس کی آزادی کیلئے اسلامی ممالک کو مشترکہ فورس تشکیل دینی چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ سعودی عرب اور اسرائیل کے درمیان تعلقات پر امت مسلمہ میں تشویش پائی جاتی ہے، یہ اسلام اور امت سے غداری کے مترادف ہوگا۔ لاہور میں عہدیداروں سے گفتگو میں انہوں نے کہا ہے کہ فلسطین عربوں کا نہیں، امت مسلمہ کا مسئلہ ہے، قبلہ اول کی آزادی پر کوئی سودے بازی قبول نہیں کریں گے، عرب ممالک امریکہ اور اسرائیل سے کسی خیر کی توقع نہ رکھیں۔

انہوں نے کہا کہ اسلامی ممالک اپنے باہمی سفارتی تعلقات مضبوط بنائیں، انہیں اغیار اور کفار کی مدد کی ضرورت ہی نہیں پڑے گی، اسرائیل کی ناجائز ریاست کو تسلیم کروانے کیلئے فلسطینیوں کے خون کی تجارت نہیں ہونے دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ اسرائیل غاصب اور ناجائز ریاست ہے جو سرزمین انبیاء فلسطین پر مسلمانوں کو بے گھر کرکے ظلم و جبر سے قائم کی گئی، چند مسلم ریاستوں نے اسرائیل کو تسلیم کرکے گھاٹے کا سودا کیا ہے، او آئی سی اسرائیل کو تسلیم کرنیوالے مسلم ممالک کی ممبر شپ ختم کرے اور ایسے ممالک سے وضاحت طلب کی جائے۔

یہ بھی دیکھیں

ایرانی و ہندوستانی وزرائے خارجہ کی ملاقات، باہمی تعاون کے مزید فروغ کے لئے پر عزم

نیویارک: اسلامی جمہوریہ ایران اور ہندوستان کے وزرائے خارجہ کے درمیان اقوام متحدہ کی جنرل …