جمعہ , 14 مئی 2021

امریکی دہشتگردوں کے سرغنہ کی افغان صدر سے ملاقات

افغانستان کے صدر اشرف غنی نے امریکی دہشت گردی کے مرکز سینٹکام کے سرغنہ سے ہوئی ملاقات میں افغانستان میں قیام امن کی ضرورت پر زور دیا ہے۔

کابل سے ہمارے نمائندے کی رپورٹ کے مطابق کینتھ مک کنزی سے گفتگو کرتے ہوئے افغانستان کے صدر محمد اشرف عنی نے کہا ہے کہ افغانستان میں قیام امن افغان عوام کی اصل خواہش اور کابل حکومت کی ترجیحات میں سر فہرست ہے۔

اس ملاقات میں امریکی دہشتگردی کے مرکز سینٹکام کے کمانڈر نے بھی دعوی کیا کہ امریکہ، افغانستان میں قیام امن کی حمایت کرتا ہے۔ یہ ایسی حالت میں ہے کہ اب تک امریکہ کے مختلف فوجی و غیر فوجی حکام افغان حکام سے کئی بار گفتگو کر چکے ہیں جن کا نہ صرف کوئی نتیجہ برآمد نہیں ہوا ہے بلکہ اس ملک میں جنگ و خونریزی اور قتل و بدامنی میں اضافے کا مشاہدہ بھی کیا گیا ہے۔

امریکہ افغانستان میں قیام امن کی حمایت کا ایسی حالت میں دعوی کر رہا ہے کہ گزشتہ بیس برسوں کے دوران اس ملک میں اپنی فوجی موجودگی کے باوجود نہ صرف یہ کہ امن قائم نہیں کر سکا ہے بلکہ افغانستان میں دہشت گردی، بدامنی، عدم استحکام اور اسی طرح اس ملک میں منشیات کی پیداوار اور اسکی اسمگلنگ میں ہوشربا اضافے کا باعث بھی بنا ہوا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …