ہفتہ , 15 مئی 2021

برطانیہ، تیسرے لاک ڈاؤن کی پابندیوں پر 100 فیصد عمل درآمد میں ناکامی

برطانوی حکومت کی طرف سے تیسرے لاک ڈاؤن کی پابندیوں پر 100 فیصد عمل درآمد یقینی بنانے کیلئے شروع ہونے والا لاک ڈاؤں بری طرح ناکامی کا شکار ہو گیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق سپر مارکیٹس میں پولیس کی نفری اور گارڈز کی تعیناتی کے باوجود ماسک اور حفاظتی انتظامات کے بغیر لوگوں کی طرف سے خریداری کا سلسلہ جاری ہے۔

حکومت کی طرف سے سخت ترین پابندیوں کے بعد اس امر کو یقینی بنانے کے احکامات جاری کیے گئے تھے کہ تمام سپر مارکیٹس میں چہرے پر ماسک کے استعمال کو ہر صورت یقینی بنایا جائے مگر وہاں احکامات کی کھلم کھلا خلاف ورزیاں دیکھی گئیں ہیں۔

ویسٹ یارکشائر پولیس فیڈریشن کے چیئرمین برائن بوٹ کا کہنا ہے کہ سپر مارکیٹس میں ماسک کے قوانین پر سختی سے عمل کرانے کیلئے اتنے افسران نہیں کہ انہیں ہر جگہ تعینات کیا جا سکے، یہ کام اسٹور مالکان اور انتظامیہ کا ہے کہ وہ احکامات کی پیروی کو یقینی بنائیں۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے محدود وسائل ہیں جن کے ساتھ تمام مقامات پر حالات سے نہیں نمٹا جا سکتا، ہر علاقے میں سپر مارکیٹس اور دوکانیں موجود ہیں، وہاں مقامی انتظامیہ کو چاہیے کہ وہ حالات کی سنگینی کے پیش نظر پابندیوں پر عمل کرائیں۔

پبلک ہیلتھ انگلینڈ کی رپورٹ کے مطابق مشرقی لندن کی تین کونسلوں میں کوویڈ کی شرح ملک بھر کی نسبت بلند ہے۔ پبلک ہیلتھ انگلینڈ کے اعداد و شمار کے مطابق لندن میں 10 ہزار 122 افراد اب تک کورونا سے ہلاک ہو چکے ہیں۔

برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن نے خبردار کیا ہے کہ ضرورت پڑی تو کورونا سے متعلق پابندیاں مزید سخت کی جا سکتی ہیں۔

 

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …