اتوار , 17 اکتوبر 2021

آئس کریم میں کرونا وائرس کی تصدیق

شمالی چین میں آئس کریم کے نمونوں میں کرونا (کورونا) وائرس کی موجودگی کا انکشاف ہوا ہے۔

شمالی چین کی تیانجن داچیاؤ داؤ فوڈ کمپنی کی تیار کردہ متاثرہ آئس کریم کرونا وائرس کی موجودگی کے انکشاف کے بعد حکام نے ہزاروں مصنوعات ضبط کرلیں ہیں۔

تیانجن داچیاؤ داؤ فوڈ کمپنی نے رواں ہفتے میونسپل سینٹر کو آئس کریم کے نمونے بھیجے تھے اور ان تمام میں کوویڈ-19 کے تمام ٹیسٹ مثبت آئے تھے۔

وبائی امور کی تحقیقات سے ظاہر ہوتا ہے کہ کمپنی نے آئس کریم کے بیچ کو جس خام مال کا استعمال کرتے ہوئے تیار کیا تھا اس میں نیوزی لینڈ سے درآمد شدہ دودھ پاؤڈر اور یوکرین سے درآمد کردہ دہی پاؤڈر شامل ہیں۔

آئس کریم کمپنی نے تصدیق کی ہے کہ جمعرات کی دوپہر 2بجے تک اس کے 1ہزار 662 ملازمین میں نیوکلک ایسڈ کی جانچ کے لیے انہیں قرنطینہ میں رکھا گیا۔ ان ملازمین میں سے 700کا کرونا ٹیسٹ منفی آیا ہے جبکہ باقی 962 ملازمین کے نتائج کی تصدیق ہونا باقی ہے۔

تیانجن میں وبائی امراض کے حکام نے بتایا کہ فوڈ کمپنی کے 4زار 836متاثرہ باکسز میں سے 2ہزار 89کو اسٹوریج میں کامیابی کے ساتھ سیل کردیا گیا ہے۔

مارکیٹوں میں بھیجے گئے آئس کریم کے 2ہزار 747باکسز میں سے مثبت ٹیسٹ کے نتیجے کے وقت محض 935 باکسز ہی تیانجن کے بازاروں میں موجود تھے اور ان میں سے بھی صرف 65باکسز ہی فروخت ہوئے ہیں۔

دوسری جانب تیانجن میں حکام نے پروڈکشن پلانٹ کو جراثیم کش سپرے سے ڈس انفیکٹ کر دیا ہے اور مقامی افراد کو ہدایت کی ہے کہ جنہوں نے آئس کریم خریدی ہو وہ اپنی کمیونٹیز کے متعلقہ طبی اداروں کو اس کی رپورٹ کریں۔

 

 

یہ بھی دیکھیں

کانگریس کی عمارت پر حملہ اور کابل میں طیارے سے گرتے شہری، امریکی دور کے خاتمہ کا ثبوت : ایرانی صدر

اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر سید ابراہیم رئيسی نے منگل کو ، ویڈیو کانفرنسنگ کے …