منگل , 19 اکتوبر 2021

دبئی میں ہولوکاسٹ کی یاد میں نمائش

دبئی: ذہنی پسماندگی کے شکار حاکم دبئی کی جانب سے ہولوکاسٹ کے من گھڑت واقعے کی یاد میں نمائیش کا افتتاح کیا گیا ہے۔

ہولوکاسٹ کی یاد میں خودساختہ اسرائیلی حکومت کے سفیر کی موجودگی میں نمائش کا افتتاح ایک ایسے وقت کیا گیا ہے کہ جب غزہ کی حالیہ 12 روزہ جنگ میں 250 سے زيادہ فلسطینی شہید ہوئے ہیں۔

ہولوکاسٹ کے من گھڑت اور جھوٹے واقعہ کی یاد میں دبی کے میوزیم میں ایک یادگار نمائش کا باضابطہ طور سے افتتاح کیا گیا ہے جس میں صیہونی حکومت کے سفیر ایتان نائیہ اور دیگر سفارتی کار موجود تھے۔

ہولوکاسٹ کے خودساختہ واقعہ کے تعلق سے کسی عرب میں یہ پہلی نمائش ہے جو متحدہ عرب امارات کی جانب سے صیہونی حکومت کو تسلیم کئے جانے کے بعد منعقد کی جارہی ہے۔

فلسطین الیوم کی رپورٹ کے مطابق اس نمائش کا افتتاح ایک ایسے وقت کیا گیا ہے کہ جب حالہ 12 روزہ جنگ میں صیہونی حکومت نے غزہ کے علاقے میں 250 سے زیادہ فلسطینیوں کا قتل عام کیا ہے، ان میں 66 معصوم بچے، 39 خواتین اور 17 ضیف العمر افراد شامل ہیں۔

ہولوکاسٹ ایک ایسا جھوٹا اور من گھڑت واقعہ جس کے تحت صیہونی دعویدرا ہیں کہ 1939 سے 1945 کے برسوں کے دوران جرمنی کے ڈکٹیٹر ایڈولف ہٹلر نے 60 لاکھ یہودیوں کو ان کی نسل کشی کے ہدف سے ‍زندہ گیس چیمبروں میں ڈال کر جلادیا تھا۔

مغربی ملکوں میں ہولوکاسٹ کی تردید یا اس کے بارے میں تحقیق کرنے پر مکمل طور سے پابندی ہے اور ایسا کرنے والے افراد کو سخت تادیبی اقدامات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

ایرانی و ہندوستانی وزرائے خارجہ کی ملاقات، باہمی تعاون کے مزید فروغ کے لئے پر عزم

نیویارک: اسلامی جمہوریہ ایران اور ہندوستان کے وزرائے خارجہ کے درمیان اقوام متحدہ کی جنرل …