جمعرات , 9 دسمبر 2021

شام کے صدر بشار اسد نے حلف اٹھا لیا/ فلسطینی عوام کی حمایت کا پختہ عزم

دمشق: شام کے صدر بشار اسد نے آج شام کی پارلیمنٹ میں حلف اٹھانے کے بعد حلف برداری کی تقریب میں شریک مہمانوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ شامی عوام اور حکومت نے دمشنوں اور ان کے حامیوں کی سازشوں کو استقامت اور پائیداری کے ساتھ ناکام بنادیا ہے۔ بشار اسد نے آئندہ سات سال کے لئے ملک کے صدر کے عہدے کا حلف اٹھا لیا ہے۔

شام کے صدر بشار اسد کی حلف برداری کی تقریب میں شامی پارلیمنٹ کے نمائندوں، شام کی سیاسی شخصیات، سفارتکاروں اور ذرائع ابلاغ کے اندرونی اور بیرونی نمائندوں نے شرکت کی۔

صدر بشار اسد نے اپنے خطاب میں کہا کہ استقلال اور حریت پسند قومیں ہمیشہ اپنے استقلال اور آزادی کے دفاع میں فعال اور سرگرم رہتی ہیں۔بشار اسد نے کہا کہ شام کے انتخابات میں عوام کی بھر پور شرکت شامی عوام کی آگاہی اور بصیرت کا مظہر ہے۔

بشار اسد نے کہا کہ اغیار سے وابستہ عناصر سے کبھی ملک و قوم کی خدمت کی توقع نہیں رکھنی چاہیے ، ضمیر فروش انسان ملک کے لئے نہیں بلکہ ملک کے دشمنوں اور ان کے حامیوں کے لئے کام کرتے ہیں۔ شامی صدر نے کہا کہ شامی عوام نے استقامت اور پائداری کے ساتھ دشمنوں اور ان کے ایجنٹوں کی گھناؤنی سازشوں کو ناکام بنادیا ہے۔

فلسطینی عوام کی حمایت کا پختہ عزم

بشار اسد نے مسئلہ فلسطین کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ مسئلہ فلسطین ہمارا سب سے قریبی مسئلہ ہے اور ہم ہمیشہ فلسطین کے مظلوم عوام کے ساتھ کھڑے ہیں اور کھڑے رہیں گے۔ امریکہ اور اس کے اتحادی ممالک کی شام کے ساتھ دشمنی کی ایک وجہ یہی ہے کہ ہم اسرائیل کے خلاف اور فلسطینیوں کے ساتھ ہیں۔ انھوں نے کہا کہ شام کے بعض علاقوں پر بھی امریکہ، ترکی اور اسرائیلی دہشت گردوں کا قبضہ ہے اور ہمیں اپنے غصب شدہ علاقوں کو قابض اور غاصب دہشت گردوں سے آزاد کرانا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

عراق کے شہر بصرہ میں بم دھماکے میں پندرہ افراد شہید

بصرہ: عراق کے جنوبی شہر بصرہ میں الجمہوری اسپتال کے قریب زوردار بم دھماکے کے …