منگل , 19 اکتوبر 2021

سات لاکھ افغان مہاجرین کی آمد متوقع، پاکستان نے انتظامات مکمل کرلیے

اسلام آباد: پاکستان نے افغانستان سے مہاجرین کی ممکنہ آمد سے متعلق انتظامات مکمل کرلیے۔

ذرائع کے مطابق افغان کمشنریٹ نے تین کراسنگ پوائنٹس کےقریب مہاجر کیمپوں کے لیے مقامات کی نشاندہی کرلی ہے جہاں طور خم بارڈرکے قریب ضلع خیبر، غلام خان بارڈرکے قریب شمالی وزیرستان میں کیمپ لگیں گے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ چترال میں ارندو کراسنگ پوائنٹ کے قریب ضرورت پڑنے پر کیمپ قائم ہوں گے، افغانستان سے 5 لاکھ سے7 لاکھ مہاجرین پاکستان آسکتے ہیں۔

کمشنرافغان مہاجرین عباس خان کا کہنا ہے کہ پاکستان نے مزید افغان مہاجرین کو آنے کی اجازت نہ دینےکا فیصلہ کیا ہے تاہم اگر کوئی انسانی المیہ ہوا تو پاکستان اس کے لیے مکمل طور پر تیار ہے۔

مہاجرین سے متعلق حکومتی مؤقف
واضح رہےکہ اس سے پہلے وزرا اور حکومتی مشیر کہہ چکے ہیں کہ افغانستان سے مہاجرین قبول نہیں کیے جائیں گے۔

مشیرقومی سلامتی معید یوسف دورہ امریکا کے دوران یہ بات واضح کرچکے ہیں کہ پاکستان مزید افغان پناہ گزینوں کا متحمل نہیں ہوسکتا جب کہ وفاقی وزیرداخلہ شیخ رشید نے کچھ روز قبل واضح کیا تھاکہ کوئی افغان مہاجر پاکستان نہیں آرہا۔

 

یہ بھی دیکھیں

ایرانی و ہندوستانی وزرائے خارجہ کی ملاقات، باہمی تعاون کے مزید فروغ کے لئے پر عزم

نیویارک: اسلامی جمہوریہ ایران اور ہندوستان کے وزرائے خارجہ کے درمیان اقوام متحدہ کی جنرل …