منگل , 19 اکتوبر 2021

گوادر حملہ: چین کا پاکستان کے متعلقہ محکموں سے مؤثر سیکیورٹی اقدامات کا مطالبہ

اسلام آباد: پاکستان میں چینی سفارتخانے نے گوادر میں گزشتہ روز دہشتگردی کے واقعے کی شدید مذمت کرتے ہوئے پاکستان کے تمام متعلقہ محکموں سے مؤثر سکیورٹی کے لیے مؤثر عملی اقدامات اٹھانے کا مطالبہ کیا ہے۔

چینی سفارتخانے کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہےکہ گوادار ایکسپریس وے منصوبے پر چینی عملے کے موٹر قافلے پر خودکش حملہ کیا گیا جس میں ایک چینی زخمی، دو مقامی بچے جاں بحق اور کئی زخمی ہوئے۔

اعلامیے میں کہا گیا ہےکہ پاکستان میں چینی سفارت خانہ گوادر میں دہشتگردی کی کارروائی کی مذمت، دونوں ممالک کے زخمی افراد سے ہمدردی اور جاں بحق ہونے والوں پر تعزیت کا اظہار کرتا ہے۔

اعلامیے میں مزید کہا گیاہے کہ پاکستان سے مطالبہ کرتے ہیں کہ زخمیوں کو مکمل طبی امداد دی جائے اور پاکستان خود کش دھماکے کی مکمل تحقیقات کرکے مجرموں کو سخت سزا دے۔

چینی سفارتخانے کی جانب سے کہا گیاہےکہ پاکستان کے تمام متعلقہ محکمے مؤثر سکیورٹی کے لیے مؤثر عملی اقدامات اٹھائیں، پاکستان سکیورٹی تعاون کا طریقہ اپ گریڈ کرے تاکہ یقینی بنایاجائےکہ آئندہ ایسے واقعات پیش نہ آئیں۔

جاں بحق بچوں کی تعداد 3 ہوگئی، واقعے کا مقدمہ درج
دوسری جانب گوادر خودکش حملے میں زخمی ایک اور بچہ دم توڑ گیا جس کے بعد جاں بحق ہونے والے بچوں کی تعداد 3 ہوگئی ہے جب کہ واقعے کا مقدمہ تھانہ سی ٹی ڈی میں درج کرلیا گیا ہے۔

پولیس کے مطابق گوادر ایکسپریس وے پرحملے کا مقدمہ نامعلوم دہشتگردوں کے خلاف درج کیاگیا جس میں قتل ،اقدام قتل، دھماکا خیز مواد اور دہشتگردی کی دفعات شامل ہیں۔

واضح رہےکہ بلوچستان کے ساحلی شہر گوادر میں چینی شہریوں کے قافلے پر حملہ کیا گیا جس کے نتیجے میں ایک چینی شہری بھی زخمی ہوا جب کہ تین بچے جاں بحق ہوئے۔

یہ بھی دیکھیں

ایرانی و ہندوستانی وزرائے خارجہ کی ملاقات، باہمی تعاون کے مزید فروغ کے لئے پر عزم

نیویارک: اسلامی جمہوریہ ایران اور ہندوستان کے وزرائے خارجہ کے درمیان اقوام متحدہ کی جنرل …