جمعرات , 9 دسمبر 2021

اسرائیل کی ہرزہ سرائی پر ایران کا دو ٹوک جواب

تہران: صیہونی وزیر خارجہ کی بکواس پر اسلامی جمہوریہ ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا ہے تہران جواب کا حق اپنے لئے محفوظ رکھتا ہے۔

سعید خطیب زادہ نے جمعہ کو ایک ٹویٹ میں کہا: قوانین کی دھجیاں اڑانے والی صیہونی حکومت اپنے ایٹم بم سے ایران کو ایسی حالت میں دھمکی دے رہی ہے کہ وہ این پی ٹی میں شامل نہیں ہے جبکہ ایران این پی ٹی کا رکن اور اسکی جوہری تنصیبات معائنہ شدہ ہیں۔

ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ مغرب کے اس منہ لگے کو پھروتی کی عادت پڑ گئی ہے لیکن اب دنیا اسکی اصلیت کو سمجھ چکی ہے۔ دنیا سمجھ گئی ہے کہ وہ اس وقت عالمی سطح پر عدم استحکام کا باعث ایک عنصر ہے۔

سعید خطیب زادے نے کہا کہ ایران کے پاس جواب دینے کا حق محفوظ ہے۔

واضح رہے کہ خود ساختہ صیہونی ریاست کے وزیر خارجہ یائیر لپید نے ماسکو کے اپنے تازہ دورے پر ایران پر ایٹم بم بنانے کا الزام لگایا تھا۔ انہوں نے اسپوتنک نیوز سے انٹرویو میں دعوی کیا کہ ایران جوہری اسلحے کے قریب ہے۔ فلسطینی راکٹوں کے سامنے بے بس صیہونی وزیر نے بزعم خود ایران کو یہ دھمکی دی کہ اگر ایران بقول انکے جوہری اسلحہ بنا لیتا ہے تو اسرائیل جواب دیے بنا نہیں رہے گا۔

صیہونی وزیر خارجہ نے جمعرات کے دن بھی اپنے روسی ہم منصب سرگئی لاوروف کے ساتھ پریس کانفرنس میں ہرزہ سرائی کرتے ہوئے کہا تھا کہ ہم ایران کو جوہری اسلحے بنانے نہیں دیں گے، ایران کہتا ہے کہ اسرائیل کو ختم کر دے گا، مگر ہم اسے ایسا کرنے نہیں دیں گے!

یہ بھی دیکھیں

عراق کے شہر بصرہ میں بم دھماکے میں پندرہ افراد شہید

بصرہ: عراق کے جنوبی شہر بصرہ میں الجمہوری اسپتال کے قریب زوردار بم دھماکے کے …