ہفتہ , 22 جنوری 2022

عراق، سامراء کے روضہائے مبارک پر حملے کی سازش کا انکشاف

بغداد: عراق کے ایک سیکورٹی ذریعے نے خبر دی ہے کہ دہشت گرد گروہ داعش کے عناصر سامراء شہر میں بڑے حملے کی منصوبہ بندی کر رہے ہیں۔

فارس نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق عراق کے ایک سیکورٹی ذریعے نے بتایا ہے کہ خونخوار دہشت گرد گروہ داعش، عراق کے شہر سامراء میں بڑی دہشت گردانہ حملے کا منصوبہ بنا رہا ہے۔

ایک عراقی ویب سائٹ نے سیکورٹی ذریعے کے حوالے سے رپورٹ دی ہے کہ خفیہ شعبے کو یہ خبر ملی ہے کہ دہشت گرد گروہ داعش، سامراء میں بڑا حملہ کر سکتا ہے۔

بتایا جاتا ہے کہ اس دہشت گردانہ حملے میں حضرت امام علی نقی علیہ السلام اور حضرت امام حسن عسکری علیہ السلام کے روضہائے مبارک، سامراء کے مشغول بازار اور لوگوں کی بھیڑ کو نشانہ بنایا جا سکتا ہے۔

اس سیکورٹی ذریعے نے بتایا ہے کہ یہ دہشت گردانہ کاروائی ایک کاربم سے کی جا سکتی ہے اور یہ کار بم الاسحاقی علاقے سے وہاں پہنچائی جائے گی۔

اسی تناظر میں عراقی رضاکار فورس الحشد الشعبی نے داعش کے ایک دہشت گرد کو ہلاک کر دیا اور جنوبی سامراء میں اس دہشت گرد گروہ کے 6 خفیہ ٹھکانوں کو تباہ کر دیا۔

یہ بھی دیکھیں

ترکی اور اسرائیل کے وزرائے خارجہ کے مابین باضابطہ گفتگو

انقرہ: ترکی اور اسرائیل کے وزرائے خارجہ کے مابین ٹیلی فونی گفتگو ہوئی ہے۔ ترکی …