پیر , 24 جنوری 2022

نطنز میں دھماکہ نہیں ہوا بلکہ میزائل سسٹم کا تجربہ کیا گیا: ایرانی فوج کے ترجمان

تہران: ایران کی فوج کے ترجمان نے کہا ہے کہ نطنز میں میزائل سسٹم کا تجربہ کیا گیا۔

ایران پریس کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کی فوج کے ترجمان شاہین تقی خانی نے کہا ہے کہ علاقے میں تعینات سسٹمز کا جائزہ لینے کے لیے نطنز میں میزائل سسٹم کا تجربہ کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ یہ تجربہ خطے میں قائم نظاموں کا جائزہ لینے کے لیے کیا گیا تھا۔ اس طرح کے تجربے مکمل طور پر محفوظ ماحول میں اور مربوط دفاعی نیٹ ورک کی مکمل ہم آہنگی کے ساتھ کئے جاتے ہیں۔ اس لئے پریشان ہونے کی ضرورت نہیں ہے۔

ایک با خبر مقامی ذریعہ نے کل نطنز کے صحرا میں ہونے والے دھماکے پر کہا کہ اس کا تعلق نطنز کی ایٹمی تبنصیبات سے نہیں ہے اور اس دھماکے سے کوئی جانی اور مالی نقصان نہیں ہوا۔

واضح رہے کہ کل رات 8 بجکر 15 منٹ پر فضا میں روشنی دکھائی دی اور ایک دھماکہ ہوا جس کے بعد مختلف قسم کی قیاس آرائیاں کی جانے لگیں اور ایران کے دشمنوں نے اس سے سیاسی فائدہ حاصل کرنے کی ناکام کوشش کی۔

یہ بھی دیکھیں

ترکی اور اسرائیل کے وزرائے خارجہ کے مابین باضابطہ گفتگو

انقرہ: ترکی اور اسرائیل کے وزرائے خارجہ کے مابین ٹیلی فونی گفتگو ہوئی ہے۔ ترکی …