ہفتہ , 28 مئی 2022

شہید قاسم سلیمانی ہر بیدار ضمیر انسان کے ہیرو ہیں: علامہ امین شہیدی

اسلام آباد: امتِ واحدہ پاکستان کےسربراہ علامہ محمدامین شہیدی نےخانہ فرہنگ سفارت اسلامی جمہوریہ ایران اسلام آبادکی جانب سےکتاب”صورتِ سلیمانی”کی تقریب رونمائی میں شرکت اورخطاب کیا۔انہوں نے”صورتِ سلیمانی” کوشہیدجنرل قاسم سلیمانی کےحوالہ سےمفیداورقلوب پراثراندازہونےوالی کتاب قراردیتےہوئےکہاکہ مترجم نے اس کتاب کےذریعہ پاکستانی قوم کوقاسم سلیمانی سےقریب کرنےمیں اہم کرداراداکیاہے۔

علامہ امین شہیدی نےشہیدجنرل قاسم سلیمانی کوخراجِ عقیدت پیش کرتےہوئےکہاکہ شہیدمحض ایرانی جنرل نہیں تھے۔ہماراملک اسلامی جمہوریہ ہےاوراس ملک کےتصورکےخالق علامہ اقبال ہیں۔اگرہم اقبال کی نگاہ سےمردِمومن اوراسلام کی آفاقی تعلیمات کاجائزہ لیں تواس نتیجہ پرپہنچتےہیں کہ اگرچہ پاکستانی ہونےکی حیثیت سےہماری شناخت کاایک پہلوجغرافیائی ہےلیکن یہ ہماری مکمل شناخت نہیں ہے؛ہماری اصل اورمکمل شناخت ہمارانظریہ ہےجس کا تعلق اللہ،قرآن اورانبیاءعلیہم السلام سےہے۔اگرہمارانظریہ آفاقی ہےتوپھرزمینی وجغرافیائی سرحدیں اسے محدودنہیں کرسکتیں۔جب اس نقطہ نظرسےہم اپنی تاریخ کامشاہدہ کرتےہیں تواس نتیجہ پرپہنچتےہیں کہ بہت کم ایسےلوگ ہیں جوانسانی معاشرہ کےقلب پراثراندازہوئے۔شہیدقاسم سلیمانی کومحض ایک فوجی جنرل کی نظرسےدیکھناان کی غیرمعمولی شخصیت کےساتھ زیادتی ہے۔وہ فرزندِاسلام تھےاورموجودہ امتِ اسلامی کےسب سےبڑےمحافظ بھی!

ہم نےعملی طورپردیکھاکہ قاسم سلیمانی کاقیام جس سرزمین پربھی رہا،وہ اسی سرزمین کےباشندےتھے۔ایران میں ایرانی،عراق میں عراقی،لبنان میں لبنانی،فلسطین میں فلسطینی اورشام میں شامی عوام اورجوانوں کےساتھ شامی بن کرقیام کیا۔ان کی شناخت غیرمحدودتھی۔ان کی فکرنےاسلام کی آفاقی تعلیمات اورنظریہ کوپیش کیا۔عرب ممالک،پاکستان اوریورپ میں جہاں جہاں خداپرستی،استعمارستیزی،طاغوت سےجنگ،بیداری اورمبارزہ ہے،وہاں وہاں اس عظیم شہیدکی جدوجہدکےآثارموجودہیں اوروہاں کےلوگوں کےقلوب میں ان کےلئےعشق ومحبت کاسمندر موجزن ہے۔رہبرانقلاب اسلامی سیدعلی خامنہ ای نےشہید جنرل قاسم سلیمانی کوخراج عقیدت پیش کرتےہوئےکہاکہ اگرشہید کاجنازہ لبنان،شام اورپاکستان لےکرجاتےتووہاں کی عوام بےتابانہ اس جلوس میں شرکت کرتی۔اس کی وجہ کیاہے؟وجہ یہ ہےکہ جب انسان کی روح پاکیزہ ہوتووہ ہمیشہ فطرت کی آوازپرلبیک کہ کرسچائی کوقبول کرتاہےاورسچائی،بیداری اورشجاعت کےسامنےسرِتسلیم خم کرتاہے۔آج دنیاکےجس کونےمیں بھی بیدارضمیراورپاکیزہ روح کےحامل لوگ ہیں،خواہ وہ مسلم ہوں یاغیرمسلم،اگران کےاندرظلم سےنفرت اوربیداری کاجذبہ موجودہےتوان کاہیروایک ہی شخص ہوسکتاہےاوروہ شہیدجنرل قاسم سلیمانی ہے۔

یہ بھی دیکھیں

قم کے عوام کے قیام کی برسی، رہبر انقلاب اسلامی کے خطاب کا متن

بسم اللہ الرحمن الرحیم الحمدللہ رب العالمین و الصلاۃ و السلام علی سیدنا محمد و …