ہفتہ , 28 مئی 2022

دنیا کی پہلی پودوں سے تیار کووڈ 19 ویکسین

کورونا وائرس سے مقابلے کے لیے پودوں کی مدد سے دنیا کی پہلی کووڈ 19 ویکسین کو تیار کرلیا گیا ہے۔

میٹسابوشی کیمیکل ہولڈنگز کارپوریشن کی ذیلی شاخ میڈکاگو، گلیکسو اسمتھ کلائن اور فلپ مورس انٹرنیشنل کے اشتراک سے تیار کردہ اس ویکسین کو کووفینز کا نام دیا گیا ہے

کمپنیوں کی جانب سے جاری بیان کے مطابق یہ ویکسین 18 سے 64 سال کی عمر کے لیے دستیاب ہوگی۔

انہوں نے بتایا کہ اس ویکسین کو کسی جگہ پہنچانا اور محفوظ کرنا کسی ایم آر این اے ویکسین سے زیادہ آسان ہے کیونکہ اسے بہت کم درجہ حرارت میں رکھنے کی ضرورت نہیں۔

اس ویکسین کو پودوں میں پائے جانے والے ایسے پروٹینز سے تیار کیا گیا ہے جو مدافعتی نظام کو کورونا وائرس کی طرح نظر آتے ہیں تاکہ وہ اس سے مقابلے کے لیے تیار ہوسکے۔

اس کے علاوہ ویکسین میں مدافعتی نظام کے ردعمل کو بڑھانے کے لیے گلیکسو اسمتھ کلائن کے ایک خاص pandemic adjuvant کو بھی استعمال کیا گیا ہے۔

کینیڈا کو اس ویکسین کی 7 کروڑ 60 لاکھ خوراکیں فراہم کرنے کا معاہدہ ہوچکا ہے جبکہ میڈیکاگو کی جانب سے دیگر ممالک سے بھی بات کی جارہی ہے۔

بیان میں مزید بتایا گیا کہ یہ ویکسین کورونا وائرس کی متعدد اقسام سے تحفظ فراہم کرنے میں 71 فیصد تک مؤثر ہے۔

یہ دسمبر 2021 تک کے کلینکل ٹرائلز کے نتائج ہیں یعنی اومیکرون کے حوالے سے اس کی افادیت ابھی واضح نہیں۔

کورونا کی قسم ڈیلٹا کے خلاف اس کی افادیت 75 فیصد جبکہ گاما قسم کے خلاف لگ بھگ 89 فیصد تک دریافت ہوئی۔

اس وقت چونکہ اومیکرون قسم زیادہ بڑے پیمانے پر نہیں پھیلی تھی تو اس کے حوالے سے کمپنی کی جانب سے مزید ٹرائلز پر کام کرنے کی منصوبہ بندی کی جارہی ہے۔

یہ بھی دیکھیں

کراچی سمیت سندھ بھر میں آج سے انسداد پولیو مہم کا آغاز ہوگا

کراچی سمیت سندھ بھر میں آج سے انسداد پولیو مہم کا آغاز ہوگا۔ محکمہ صحت …