بدھ , 30 نومبر 2022

قطیف کے شیعوں کو پھانسی دینا بہت بڑا جرم ہے: یمنی وزیر اطلاعات

صنعا: یمن کے وزیر اطلاعات نے سعودی حکومت کی جانب سے قطیف کے 41 شیعوں سمیت 81 افراد کو پھانسی دینے کو عظیم جرم قراردیتے ہوئے کہا ہے کہ یہ جرم امریکہ کی مرضی اور قیادت سے انجام کیا گیا ہے۔

یہ بات یمن کی قومی سالویشن حکومت کے وزیر اطلاعات ضعیف اللہ شامی نے ٹوئیٹر پر ایک ٹوئیٹ میں کہی۔

انہوں نے سعودی حکومت کی جانب سے قطیف کے 41 شیعوں سمیت 81 افراد کو پھانسی دینے کو عظیم جرم قراردیتے ہوئے کہا ہے کہ یہ جرم امریکہ کی مرضی اور قیادت سے انجام کیا گیا ہے۔

شامی نے بتایا کہ یہ جرم امریکیوں کی خواست اور سربراہی کے بغیر نہیں ہو سکتا تھا اور یہ مغربی بیہودہ جمہوریت کی واضح مصداق ہے۔

انہوں نے کہا کہ سب جانتے ہیں کہ سعودی ولیعہد شہزادہ محمد بن سلمان امریکی گرین لائٹ اور اجازت کے بغیر تفریحی دورے پر بھی نہیں جائیں گے۔

یہ بھی دیکھیں

سپاہ پاسداران نے جنوبی علاقے میں ایک عرب انٹیلی جنس سروس کی سازشوں کو بے نقاب کیا

تہران:سپاہ پاسداران انقلاب نے ایک ایک رجعت پسند عرب انٹیلی جنس سروس کے ایک ایجنٹ …