ہفتہ , 28 مئی 2022

روس نے یوٹیوب کو خبردار کردیا

ماسکو: روسی حکام نے ویڈیو اسٹریمنگ پلیٹ فارم گوگل سے مطالبہ کیا ہے کہ یوٹیوب پر روسی شہریوں پر مختلف انداز میں دباؤ ڈالنا بند کیا جائے، اگر ایسا نہ گیا تو ملک بھر میں اس کی سروسز معطل کردی جائیں گی۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق اس حوالے سے روس میں موجود گوگل کے ترجمان نے تاحال کوئی مؤقف نہیں دیا۔

روسی ریگولیٹرز کا کہنا ہے کہ یوٹیوب پر اشتہارات کے ذریعے روس کے خلاف منفی پیغامات نشر کرنے سے ثابت ہوتا ہے کہ پلیٹ فارم روس مخالفت پر اتر آیا ہے۔ یوٹیوب انتظامیہ کے اقدامات دہشتگردی کے زمرے میں آتے ہیں جس کی وجہ سے روسی شہریوں کی زندگیوں کو خطرہ لاحق ہیں۔

ریگولیٹرز نے واضح طور پر ایسی اشتہاری مہم کی مخالفت کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ گوگل یوٹیوب پر روس مخالف ویڈیوز نشر کرنے کا سلسلہ فوری طور پر بند کرے۔

خیال رہے کہ یوٹیوب روس کے سرکاری میڈیا کو دنیا بھر میں بلاک کرنے کے بعد مواصلاتی ریگولیٹرز اور سیاسی رہنماؤں کے شدید دباؤ میں ہے۔

دوسری جانب حیرت انگیز طور پر میٹا کے پلیٹ فارمز پر سوشل میڈیا صارفین کو روس کے خلاف منفی پیغامات پوسٹ کرنے کی اجازت دے دی گئی ہے جس کی وجہ سے ماسکو نے رواں ہفتے انسٹاگرام کو بلاک کردیا جبکہ روسی میڈیا کی سرگرمیاں محدود کرنے پر صارفین کی فیس بک تک رسائی بھی معطل کردی گئی تھی۔

رواں ماہ یوکرینی ہیکرز کی بڑی تعداد نے نئے اہداف کو نشانہ بنانے کا اعلان کیا تھا جس میں بیلاروس میں ریلوے نیٹ ورک بھی شامل تھا۔

ماسکو کا قریبی اتحادی بیلاروس روسی افواج کو یوکرین میں داخل ہونے کیلئے راستہ فراہم کررہا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

امریکہ نے وسطی ایشیا کو اپنی بائیولوجیکل سرگرمیوں کا مرکز بنا لیا: روس

امریکہ نے وسطی ایشیا کو اپنی بائیولوجیکل سرگرمیوں کا مرکز بنا رکھا ہے اور روس …