بدھ , 6 جولائی 2022

شیعہ جوانوں کی جبری گمشدگی ملک میں بیرونی مداخلت کا شاخسانہ ہے (آغا علی رضوی)

شیعہ جوانوں کی جبری گمشدگی ملک میں بیرونی مداخلت کا شاخسانہ ہے (آغا علی رضوی

مجلس وحدت المسلمین گلگت بلتستان کا صوبائی و ضلعی کابینہ کا اجلاس آج  آغا علی رضوی کی صدارت میں ایم ڈبلیو ایم سیکٹریٹ سکردو میں منعقد ہوا-
تقریب سے خطاب کرتے ہوئے آغا علی رضوی  نے ملک میں بڑھتی ہوئی بد امنی , بم دھماکے اور شیعہ جوانوں کی ماورا عدالت جبری گمشدگی کی نئی لہر کو بیرونی مداخلت کا شاخسانہ قرار دیتے ہوئے گہری تشویش کا اظہار کیا- شرکاء محفل نے متفقہ طور پر  وطن عزیز میں امریکی مداخلت, شیعہ جوانوں کی جبری گمشدگی ,گلگت بلتستان میں عوامی زمینوں کی بندر بانٹ کے خلاف اور سانحہ اٹھاسی سے لیکر سانحہ پشاور  تک بے گناہ شہیدوں کو خراج تحسین پیش کرنے کے لئے 12 جون 2022 کو یادگار شہداء پہ استحکام پاکستان اور عظمت شہداء کانفرنس منعقد کرنے کا اعلان کردیا-
صوبائی اور ضلعی کابینہ نے نو منتخب چیر مین مجلس وحدت المسلمین علامہ راجہ ناصر عباس جعفری صاحب کو مبارک باد دی اور  بھر پور اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے آپ کی بابصیرت قیادت میں منظم ہوکر چلنے کا تجدید عہد کیا-
22 مئی یوم تاسیس امامیہ سٹوڈنٹس آرگنائزیشن کی مناسبت سے شوریٰ عالی کے رکن کاچو زاہد علی خان نے آئی ایس او کی تاریخ اور قومی خدمات کے حوالے سے گفتگو کی -شرکاء نے امامیہ طلباء کو جدوجہد کے پچاس سال مکمل کرنے پر مبارک باد پیش کی- شہید  ڈاکٹر محمد نقوی اور دیگر شہداء کو خراج عقیدت پیش کیا-
شرکاء اجلاس نے صوبائی کابینہ کے رکن فدا حسین شمیم کو ان کی والدہ گرامی کی رحلت پہ تعزیت پیش کیا اور مرحومہ کی بلندی درجات کے لئے فاتحہ خوانی کی-
آخر میں سابق وزیر اعلٰی گلگت بلتستان سید مہدی شاہ کی صحت یابی کے لئے خصوصی دعا کی گئی-

یہ بھی دیکھیں

ایران و اسلام کے دشمنوں کا ہتھیار سافٹ وار اور ثقافتی یلغار ہے: رہبرانقلاب اسلامی

رہبرانقلاب اسلامی نے دشمنوں کی سازشوں سے ہوشیار رہنے کی ضرورت پر تاکید کرتے ہوئے …