بدھ , 28 ستمبر 2022

چین اور روس کا امریکہ کے خلاف بڑا اقدام

امریکا کی جانب سے شمالی کوریا پرنئی پابندیاں عائد کرنے کی قرارداد چین اور روس نے ویٹو کر دی۔ امریکا نے نئے بین البر اعظمی بیلسٹک میزائل تجربوں کو جواز بنا کر شمالی کوریا کوتیل کی فروخت پر پابندی کی قرارداد سلامتی کونسل میں پیش کی تھی، جہاں 13 ارکان نے امریکی قرارداد پیش کرنے کی حمایت کی تھی۔

مستقل ارکان کی جانب سے ویٹو کا حق 15 سال بعد استعمال کیا گیا ہے۔ سلامتی کونسل کے مستقل ارکان کی جانب سے آخری مرتبہ کسی قرارداد کو 2006 میں ویٹو کیا گیا تھا۔ سلامتی کونسل کے مستقل ارکان میں امریکا، روس، چین، برطانیہ اور فرانس شامل ہیں۔

واضح رہے کہ امریکی دھمکیوں کو نظر انداز کرتے ہوئے شمالی کوریا نے اس سال ریکارڈ تعداد میں میزائل لانچ کیے جن کی تعداد 16 بتائی جاتی ہے۔ ان تجربات میں 2017 کے بعد بین البر اعظمی بیلسٹک میزائلوں کا سب سے بڑا تجربہ بھی شامل ہے۔

امریکی فوجی کمانڈ نے کہا ہے کہ وہ شمالی کوریا کے متعدد بیلسٹک میزائلوں کے تجربات سے آگاہ ہے اور اس کا جائزہ لے رہا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

ڈارک ویب کی دھمکی اور پریشان حکومت

حکومت اور متعلقہ ایجنسیاں اب بھی ڈارک ویب کے اس دعوے کے حوالے سے اندھیرے …