اتوار , 25 ستمبر 2022

’سود سے متعلق قرآن میں جو کہا گیا اسکی حکم عدولی کا کوئی سوچ بھی نہیں سکتا‘

وزیراعظم شہباز شریف کا کہنا ہے کہ سود سے متعلق قرآن کریم میں جو کہا گیا اس کی حکم عدولی کے بارے میں کوئی سوچ بھی نہیں سکتا۔

لاہور میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم شہباز شریف کا کہنا تھا کہ دنیا میں ہمیں اسلامی بلاک میں سب سے آگے ہونا چاہیے تھا لیکن آج ہم دوسرے ممالک سے قرض مانگ رہے ہیں۔

سود سے متعلق بات کرتے ہوئے شہباز شریف کا کہنا تھا کہ قرآن پاک میں سود سے متعلق جو کہا گیا ہے اس کی حکم عدولی کے بارے میں کوئی سوچ بھی نہیں سکتا۔


یاد رہے کہ چند روز قبل وفاقی شرعی عدالت نے ملک میں جاری سودی نظام کو معاشی نظام کی خرابی قرار دیتے ہوئے حکومت کو 5 سالوں میں سود سے پاک معاشی نظام نافذ کرنے کا حکم دیا تھا۔

ملکی معیشت سے متعلق بات کرتے ہوئے وزیراعظم کا کہنا تھا بنگلا دیش کے لوگ بوجھ نہیں تھے لیکن انہیں بوجھ بناکر پیش کیا گیا، آج بنگلادیش کی ایکسپورٹ 40 اور ہماری 27ارب ڈالر پر ہے۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ہمیں پاکستان کو آگے لیکر جانا ہے تو انا اور ضد سے آگے بڑھنا ہو گا، سب کے لیے ہم مثال پیش کریں گے تو بات بنے گی، اشرافیہ اگر خود یہ کہے کہ آپ سب کچھ کریں لیکن ہم پر بوجھ نہ آئے تو یہ ملک نہیں چل سکتا

یہ بھی دیکھیں

سینیٹ کی رکنیت کا حلف اٹھانے کے بعد اسحاق ڈار بطور وزیر خزانہ حلف اٹھائیں گے

اسلام آباد: لندن میں مسلم لیگ (ن) کے قائد نواز شریف اور وزیراعظم شہباز شریف …