بدھ , 28 ستمبر 2022

عشرت حسین نے سبسڈی کو قومی خزانے پر بوجھ قرار دیدیا

کراچی: سابق گورنر اسٹیٹ بینک ڈاکٹر عشرت حسین نے سبسڈی کو قومی خزانے پر بوجھ قرار دے دیا۔

لمز یونیورسٹی میں سابق گورنر اسٹیٹ بینک ڈاکٹر عشرت حسین کی کتاب کی تقریب رونمائی ہوئی، اس موقع پر ڈاکٹر عشرت کا کہنا تھا کہ توانائی کے شعبے میں ہنگامی اقدامات کی ضرورت ہے ، 17 روپے یونٹ بجلی خرید کر 6 روپے میں بیچنے کا کوئی جواز نہیں،ایل پی جی افورڈ کرنے والوں کو قدرتی گیس دینا مناسب نہیں، ایسی سبسڈی ناقابل برداشت ہے جو قومی خزانے پر بوجھ ہو

انہوں نے کہا کہ معاشی اور اقتصادی میدان میں مزید نقصان سے بچنے کے لیےتوانائی کے شعبے میں فوری اصلاحات کی ضرورت ہے جب کہ سبسڈی قومی خزانے پر بوجھ ہے۔

سابق گورنر کا کہنا تھا کہ مہنگائی پر قابو پانے کے لیے اسٹیٹ بینک سے قرض لینا اور نئے نوٹ چھاپنا مناسب نہیں، نجکاری سمیت دیگر معاملات کے حوالے سے تمام سیاسی جماعتوں کو اپنے منشور مد نظر رکھنےچاہئیں، یہ نہیں ہونا چاہیےکہ حکومت میں بیانیہ کچھ ہو اور اپوزیشن میں کچھ

یہ بھی دیکھیں

ڈالر کی اڑان جاری، اوپن مارکیٹ میں قیمت 245 روپے سے تجاوز کرگئی

کراچی: ملک کو رواں سال مطلوبہ 36 ارب ڈالر کی ضروریات کا بندوبست نہ ہونے، …