ہفتہ , 20 اپریل 2024

امام خمینی کا انقلاب ایرانی سرحدوں تک محدود نہیں رہی:عراقی اہلسنت عالم

عراق کے اہلسنت عالم دین اور سرکاری ترجمان عامر البیاتی کا کہنا ہے کہ ایران میں امام خیمنی کا لایا ہوا انقلاب ایران کی سرحدوں تک ہی محدود نہیں رہا بلکہ پوری دنیا اس سے متأثر ہوئی۔

امام خمینی کا انقلاب ایرانی سرحدوں تک محدود نہیں رہی:عراقی اہلسنت عالم
عراق کے سرکاری ترجمان عامر البیاتی نے اپنے ایک انٹرویو میں کہا کہ جو بھی حقیقت کو دیکھنا چاہتا ہے وہ ایران کے اسلامی انقلاب کے اثرات کو دیکھے جو صرف ایرانی قوم تک محدود نہیں ہے بلکہ پوری اسلامی امت اس انقلاب سے متاثر ہوئی اور اس نے اسلامی امت کی تاریخ کو بھی متاثر کیا ہے
البیطی نے مزید کہا کہ امام خمینی اسلامی امت کو علم کا ایک عظیم سرچشمہ بنانے میں کامیاب ہوئے اور ظالموں کو ان کی اوقات یاد دلا دی،عامر البیاتی نے اس بات پر تاکید کرتے ہوئے کہ امام خمینی کا انقلاب مذہبی تعصب سے دور ہے، کہا کہ کہا جا سکتا ہے کہ امام خمینی کا انقلاب ایک ایسا انقلاب ہے جو مذہبی تعصب اور فرقہ واریت سے ہٹ کر سرحدوں کو عبور کرتا ہے اور جہالت سے مقابلہ کرنے کا مسلمانوں کا ایک عظیم تجربہ ہے جہاں خدا نے چاہا کہ ان کے پیروکاروں کو اس کی حمایت حاصل ہو نیز ان کے مکتب میں سیکھنے والے طلباء اپنی برادریوں کے لیے ایک نمونہ بن سکتے ہیں۔
عراق کے دارالافتاء میں علوم و تحقیق کے سائنسی دفتر کے سربراہ نے تاکید کی کہ امام خمینی کی اسلامی اتحاد کی دعوت نے ایران کی سرحدوں کو عبور کیا اور اسے کتاب خدا اور سنت نبوی کی بنیاد پر ایک عظیم اسلامی دعوت میں بدل دیا، یہ دعوت ان تمام سرحدوں کو عبور کرنے میں کامیاب رہی جو اس کے لیے کھینچی گئی تھیں اس لیے کہ حقیقی اسلامی دعوت کی یہی خصوصیت ہے۔

یہ بھی دیکھیں

عمران خان نے تحریک انصاف کے کسی بڑے سیاسی رہنما کے بجائے ایک وکیل کو نگراں چیئرمین کیوں نامزد کیا؟

(ثنا ڈار) ’میں عمران کا نمائندہ، نامزد اور جانشین کے طور پر اس وقت تک …