پیر , 26 ستمبر 2022

سابق برطانوی فوجی یوکرین میں روسی افواج سے لڑتے ہوئے مارا گیا

ایک سابق برطانوی فوجی یوکرین میں مبینہ طور پر روسی افواج سے لڑتے ہوئے مارا گیا۔—فوٹو:فیس بک
ایک سابق برطانوی فوجی یوکرین میں مبینہ طور پر روسی افواج سے لڑتے ہوئے مارا گیا۔—فوٹو:فیس بک
ایک سابق برطانوی فوجی یوکرین میں مبینہ طور پر روسی افواج سے لڑتے ہوئے مارا گیا۔

برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کے مطابق مارچ میں برطانوی فوج چھوڑ کر یوکرین کا سفر کرنے والے جارڈن گیٹلی کی روسی افواج سے لڑنے کے دوران ہلاک ہونے کی خبر جمعے کے روز سامنے آئی۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق جورڈن گیٹلی نے مارچ میں برطانوی فوج کو خیر باد کہہ دیا تھا جس کے بعد سے وہ یوکرین کے فوجیوں کو روس کے خلاف اپنے ملک کے دفاع میں مدد فراہم کر رہے تھے۔

رپورٹس کے مطابق جارڈن گیٹلی کے والد نے سوشل میڈیا پرا طلاع دی کہ بیٹے کی موت یوکرین کے مشرقی شہر سیوروڈونتسک میں روسی افواج سے لڑتے ہوئے ہوئی۔انہوں نے اپنے بیٹے کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے اسے ایک ہیرو قرار دیا۔

یوکرین میں روس کے 2 سے4 ہزار فوجی ہلاک ہوچکے ہیں، امریکی انٹیلی جنس کا دعویٰ
اطلاعات کے مطابق گیٹلی نے برطانوی فوج میں رائفل مین کے طور پر ایڈنبرا میں قائم رائفلز کی تیسری بٹالین کے ساتھ خدمات انجام دی تھیں۔

رپورٹس کے مطابق میں سیوروڈونتسک کی سڑکوں پر شدید بمباری جاری تھی جس کی وجہ سے روسی اور یوکرین دونوں افواج کو بھاری جانی نقصان پہنچا ہے۔

 

یہ بھی دیکھیں

امریکی صدر نے غیر نیٹو اتحادی کے افغانستان کے درجے کو ختم کر دیا

واشنگٹن:امریکا کے صدر نے اہم غیر نیٹو اتحادی کے افغانستان کے درجے کو ختم کر …