ہفتہ , 1 اکتوبر 2022

تحریک انصاف کا ملک کو مہنگائی سے بچانے کا عزم، ملک گیر احتجاج کا اعلان

سابق وزیر اعظم اور پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ ان کی حکومت نے عالمی سطح پر بڑھتی قیمتوں کے خلاف ڈھال بن کر کام کیا اور عوام کو اس کے اثرات سے بچایا، اشیا خور و نوش کی قیمتوں میں مسلسل اضافے کے خلاف آج سے ملک بھر میں احتجاج کریں گے۔

پارٹی ترجمانوں کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے سابق وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ ’میں نے خبردار کیا تھا کہ اگر پی ٹی آئی کی حکومت کو گرانے کی کوشش کی گئی تو معیشت بری طرح سے متاثر ہوگی اور کنٹرول سے باہر نکل جائے گی‘۔

اجلاس میں معیشت سے متعلق مسائل اور بڑھتی ہوئی مہنگائی کی وجہ سے شہریوں کو درپیش مشکلات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

عمران خان نے اعلان کیا کہ اشیا کی بڑھتی ہوئی قیمتوں اور پیٹرول مصنوعات سمیت توانائی اور گیس کی نرخوں میں مسلسل اضافے کے خلاف تحریک انصاف آج سے ملک بھر میں احتجاجی تحریک آغاز کرے گی۔

انہوں نے کہا کہ چوروں نے اپنی جیب بھرنے کے لیے قیمتوں میں اضافہ کیا اور عوام کو تکلیف میں چھوڑ دیا ہے، جنہوں نے بیرون ملک میں جائیدادیں بنائی ہوئی ہیں ان کو شہریوں اور ان کے مستقبل کے بارے میں کوئی فکر نہیں ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ گزشتہ 2 مہینوں میں یہ ثابت ہوا کہ پاکستان کے خلاف کس طرح سازش کی گئی اور اس کے پیچھے کون سے کردار تھے۔

انہوں نے مزید کہا کہ جو لوگ اقتدار میں آگئے ہیں وہ حکومت چلانے کے لیے تیار نہیں تھے اور اب ادارے تباہی کے دہانے پر ہیں۔

اجلاس کے شرکا نے کہا کہ دوست ممالک کے ساتھ ساتھ بین الاقوامی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) نے موجودہ حکومت کو کوئی اہمیت نہیں دی کیونکہ وہ جانتے ہیں کہ اسے عوامی حمایت اور اعتماد حاصل نہیں ہے۔‎

اجلاس کے شرکا نے آزادی اظہار اور خاص طور پر سوشل میڈیا پر شہریوں کو ہراساں کرنے کے حکومت کے ہتھکنڈوں کی مذمت کی۔

اجلاس کے شرکا نے کراچی میں حال ہی میں ہونے والے ضمنی انتخاب میں عوام کے ناقص ردعمل اور آزادانہ، منصفانہ اور پرامن انتخابات کے انعقاد میں الیکشن کمیشن آف پاکستان کی ناکامی پر بھی تشویش کا اظہار کیا۔

اجلاس میں خیبرپختونخوا کے قبائلی اضلاع کے بجٹ میں 21 ارب روپے کی کٹوتی کرنے کے حکومتی فیصلے کے ساتھ ساتھ ان اطلاعات پر بھی برہمی کا اظہار کیا گیا کہ ان علاقوں کے 50 لاکھ افراد کو تحریک انصاف کی حکومت کی جانب سے فراہم کیے گئے صحت کارڈز سے محروم کردیا جائے گا۔

اجلاس کے شرکا نے خبردار کیا کہ وفاق کے زیر انتظام قبائلی علاقوں (فاٹا) کے انضمام کو واپس لینے کی کسی بھی کوشش کی مزاحمت کی جائے گی۔‎

مہنگائی کے خلاف احتجاج
سابق وزیر عمران خان نے عوام پر زور دیا کہ وہ گھروں سے باہر نکلیں اور مہنگائی مخالف مظاہروں میں شرکت کریں اور مل کر مستقبل کا لائحہ عمل طے کریں۔

احتجاج رات 9 بجے ہوگا اور پی ٹی آئی چیئرمین رات 10 بجے کے قریب مظاہرین اور قوم سے خطاب کریں گے جس کے دوران وہ اگلے لائحہ عمل کا اعلان بھی کریں گے۔

سابق وزیراعظم نے موجودہ حکومت پر سخت تنقید کرتے ہوئے الزام عائد کیا کہ بدمعاشوں اور لٹیروں کا عوامی فلاح سے کوئی تعلق نہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ انہوں نے اپنی تجوریاں بھرنے کے لیے ملک کو گروی رکھا ہوا ہے۔

دوسری جانب تحریک انصاف کے سینئر وائس چیئرمین اور سابق وزیر اطلاعات چوہدری فواد حسین نے وڈیو پیغام میں عوام سے گزارش کی ہے کہ وہ مہنگائی مخالف احتجاج میں شرکت کریں۔

یہ بھی دیکھیں

امریکہ شام میں تیل کی لوٹ مار سے باز نہیں آ رہا:شامی وزرات پٹرولیم

جدید ترین ہتھیاروں سے لیس امریکی فوجی شامی تیل لوٹنے میں مصروف ہیں ۔اطلاعات کے …