بدھ , 6 جولائی 2022

بنگلہ دیش اور بھارت میں سیلاب کی تباہ کاریاں

بنگلہ دیش اور بھارت میں مون سون بارشوں کے بعد آنے والے سیلاب کے نتیجے میں 59 افراد ہلاک اور لاکھوں لوگ بے گھر ہو گئے۔

گزشتہ ہفتے کے دوران ہونے والی مسلسل بارشوں کے سبب بنگلہ دیش کے وسیع شمال مشرقی علاقے زیر آب آ گئے جس کے بعد پڑوسی علاقوں اور مقامات سے کٹ جانے والے گھرانوں کو نکالنے کے لیے فوجی تعینات کیے گئے ہیں۔

اسکولوں کو امدادی پناہ گاہوں میں تبدیل کر دیا گیا ہے تاکہ دریا کے بند ٹوٹنے کے سبب چند گھنٹوں میں ندیوں کی زد میں آجانے والے دیہات میں رہنے والے افراد کی رہائش کا بندوبست کیا جا سکے کیونکہ یہ تمام افراد اپنے گھروں سے محروم ہو چکے ہیں۔

دوسری جانب بھارت میں بھی شدید بارشوں اور سیلاب سے کم از کم 16 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

بھارت کی ریاست آسام میں 5 روز کی مسلسل بارش کے بعد سیلاب سے 18لاکھ سے زیادہ لوگ متاثر ہوئے ہیں۔

بنگلہ دیش میں شدید بارشوں اور بھارت کے شمال مشرق میں بالائی علاقوں میں آنے والے دو دنوں میں سیلاب سے صورتحال مزید خراب ہونے کا اندیشہ ظاہر کیا گیا تھا۔

بھارت: ایک لڑکی اپنے بھائی کو لے کر بارش کے بعد سیلاب سے گزر رہی ہے

بنگلہ دیش میں سیلاب کے دوران لوگ ڈوبی ہوئی سڑک پر موٹر سائیکل پر سوار ہیں

بنگلہ دیش میں سیلاب کے دوران کے مناظر

یہ بھی دیکھیں

کشمیر کی جامعہ مسجد ماگام جہاں تمام مسالک کے افراد نماز ادا کرتے ہیں

کشمیر کی جامعہ مسجد ماگام جہاں تمام مسالک کے افراد نماز ادا کرتے ہیں