جمعہ , 1 جولائی 2022

پابندیوں سے مسائل حل نہیں بلکہ بڑھ جاتے ہیں: چینی صدر

چین کے صدر نے پابندیاں عائد کرنے کی پالیسی پر کڑی نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا ہے کہ پابندیوں سے مسائل حل نہیں بلکہ بڑھ جاتے ہیں۔

چین کے صدر شی جن پنگ نے ورچوئل برکس بزنس فورم کے افتتاح کے موقع پر کہا کہ تاریخ نے ایک بار پھر ثابت کردیا کہ اقتصادی پابندیاں دو دھاری تلوار کی مانند ہیں۔ شی جن پنگ نے کہا کہ عالمی معیشت کو سیاسی بنانا اور اسے ہتھیار میں تبدیل کرنا یا مالیاتی نظاموں میں اپنی بنیادی حیثیت کو استعمال کرتے ہوئے جان بوجھ کر پابندیاں عائد کرنا صرف اپنے اور دوسروں کے مفادات کو نقصان پہنچانے کا باعث بنے گا اور اس سے لوگوں کو تکلیف پہنچے گی۔

انہوں نے اپنی تقریر میں کہا کہ نام نہاد طاقت پر اندھا اعتماد اور فوجی اتحاد کو وسعت دینے اور دوسروں کی قیمت پر اپنی سلامتی حاصل کرنے کی کوششیں صرف خود کو سیکیورٹی کے مخمصے میں ڈالے گی۔

چین کے صدر کا یہ بیان یوکرین کی جنگ پر ماسکو پر بڑھتی ہوئی مغربی پابندیوں کے تناظر میں آیا ہے جس نے روس کو دنیا کا سب سے زیادہ پابندیوں کا حامل ملک بنا دیا ہے۔

واضح رہے کہ 2009 میں بننے والے اس گروپ میں برازیل، روس، ہندوستان، چین اور جنوبی افریقہ شامل ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

ایران میں رواں شمسی سال میں 55 ارب ڈالر برآمدات کی توقع

بیرجند، نائب ایرانی وزیر خارجہ برائے اقتصادی سفارتکاری کے امور نے کہا ہے کہ گزشتہ …