اتوار , 25 ستمبر 2022

سوئٹزر لینڈ نے کی یورپی یونین کے بکھر جانے کی پیشنگوئی

سوئٹزر لینڈ کے نائب صدر نے کہا ہے کہ روسی گیس پر پابندی، یورپی یونین کو تباہ و برباد کر سکتی ہے ۔

رپورٹ کے مطابق سوئٹزر لینڈ (Switzerland) کی نائب صدر امارتولو بلوچر نے روس کے خلاف یورپی یونین کی پابندیوں کے بارے میں کہا کہ یورپ کے صدور، یوکرین میں جنگ کو جاری رکھنے کے بجائے اپنی ذمہ داری کو سمجھیں اور جان لیں کہ وہ روسی گیس سے وابستہ ہیں۔

سوئٹزر لینڈ کی نائب صدر بلوچر نے مزید کہا کہ یورپ کو چاہئے کہ کم سے کم دو ہزار بائیس کے موسم بہار تک، مسلسل گیس کی سپلائی اور امن کے سلسلے میں روس کے ساتھ سمجھوتہ کرلے کیونکہ بجلی اور گیس کی کمی موسم سرما سے پہلے بھی ایک تلخ حقیقت میں تبدیل ہو سکتی ہے اور اس کی بدترین صورت یہ ہوگی کہ یورپی یونین بکھر جائے گی اور یہ ایک المیہ ہوگا۔

اس سے قبل بلغاریہ نے روسی فیڈریشن کی جانب سے گیس کی قیمت کی ادائیگی کی تجویز قبول کر لینے کا مطالبہ کیا تھا۔
جرمنی کے وائس چانسلر رابرٹ ہابک نے بھی زیڈ ڈی ایف نیوز چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا تھا کہ روس کی جانب سےگیس کی سپلائی میں کمی سے جرمنی میں انرجی کی صورت حال سنگین اور تشویشناک ہوگئی ہے ۔
مولداویہ کے سابق صدر ایگور دودون نے بھی کہا ہے کہ کیشیناؤ آئندہ عشروں میں بھی یورپی یونین کا رکن نہیں بن پائےگا لیکن روس کے خلاف پابندیوں میں شامل ہوا تو آئندہ مہینوں میں ہی نقصان اٹھانا پڑے گا۔

یہ بھی دیکھیں

امریکی صدر نے غیر نیٹو اتحادی کے افغانستان کے درجے کو ختم کر دیا

واشنگٹن:امریکا کے صدر نے اہم غیر نیٹو اتحادی کے افغانستان کے درجے کو ختم کر …