ہفتہ , 1 اکتوبر 2022

گروپ سیون کی روس سے یوکرین کی زرعی محصولات منتقل کرنے کی درخواست

گروپ سیون کے سربراہوں نے روس کے خلاف مغرب کے دشمنانہ موقف کی جانب کوئی اشارہ کئے بغیر یوکرین سے زرعی محصولات منتقل کرنے کی اپیل کی ہے۔

جنگ سے پہلے یوکرین ہر مہینے ساٹھ لاکھ ٹن غلہّ برآمد کرتا تھا لیکن بندرگاہوں کے بند ہونے کے بنا پر مارچ کے مہینے میں تین لاکھ ٹن اور اپریل میں صرف دس لاکھ ٹن ہی برآمد کرسکا ہے۔

گروپ سیون کے سربراہوں نے اپنے بیان میں روس سے اپیل کی ہے کہ یوکرین کی بندرگاہوں سے زرعی محصولات منتقل کرنے کے لئے ایک راستے تک رسائی ممکن بنائے۔

آٹھ جون کو انقرہ میں روس اور ترکی کے وزرائے خارجہ نے غلّوں کے لئے کوریڈور سے متعلق مسائل پر تبادلہ خیال کیا تھااس سے قبل روس کے صدر پوتین نے کہا تھا کہ اگر کیف اپنی بندرگاہوں کو بارودی سرنگوں سے پاک کردے اور بردیانسک اور مایوپل جیسے روس کے زیرکنٹرول بندرگاہوں کے ذریعے برآمدات کی ضمانت دے تو ماسکو ، یوکرینی غلّوں کے حامل بحری جہازوں کےگذرنے میں کوئی رکاوٹ نہیں ڈالےگا۔

یہ بھی دیکھیں

ایران کا کابل دھماکے میں زخمیوں کی مدد کی پیشکش

تہران: ایران نے افغانستان کے دارالحکومت کابل دھماکے میں زخمیوں کی مدد کے لیے آمادگی …