بدھ , 10 اگست 2022
تازہ ترین

حیدرآباد میں بھی ایک کم عمر لڑکی کے مبینہ نکاح کا کیس سامنے آ گیا

حیدرآباد میں بھی ایک کم عمر لڑکی کے مبینہ نکاح کا کیس سامنے آ گیا۔

حیدرآباد کے علاقے پریٹ آباد کی مکین ایک بچی 21 مئی کو لاپتا ہوئی، پولیس نے اس کی گمشدگی کا مقدمہ 24 مئی کو درج کیا جب کہ اسی روز پولیس نے لڑکی کے والد کو بچی کا مبینہ نکاح نامہ دکھا دیا۔

لڑکی کی جانب سے ہائیکورٹ میں تحفظ کی درخواست دائر کی گئی جہاں اس کا والد پیش ہوا لیکن اپنی بیٹی سے نہ مل سکا۔

بچی کے والد نے جیو نیوز کو بتایا کہ اس کی اپنی شادی کو ہی ابھی 18 سال نہیں ہوئے تو اس کی بیٹی کی عمر کیسے 18 سال ہو سکتی ہے، بچی کے نکاح نامے میں اس کی عمر 18 سال درج کی گئی ہے۔

سندھ کی صوبائی وزیر برائے ترقی نسواں شہلا رضا نے واقعے کا نوٹس لیا جس کے بعد ادارہ ترقی نسواں کی جانب سے بچی کے والد سے رابطہ کرکے اسے قانونی مدد فراہم کرنے کی یقین دہانی کرائی گئی ہے۔

یہ بھی دیکھیں

بھارت بارشوں اور سیلاب سے ہلاکتوں کی تعداد 73 ہوگئی

نئی دہلی: بھارتی ریاست کرناٹک میں موسلادھار بارشوں اور سیلاب سے ہونے والی ہلاکتوں کی …