اتوار , 25 ستمبر 2022

عالمی منڈی میں گندم اور کھاد کی ترسیل پر گوترش اور لاوروف کی گفتگو

اقوام متحدہ کے ترجمان نے اعلان کیا ہےکہ اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انٹونیو گوترش اور روس کے وزیر خارجہ سرگئی لاوروف کے درمیان عالمی منڈیوں میں یوکرین کا گندم اور اسی طرح روسی کھاد پہنچائے جانے کے بارے میں گفتگو ہوئی ہے۔

رپورٹ کے مطابق اسٹیفن دوجاریک نے نامہ نگاروں ‎سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ  اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انٹونیو گوترش نے بدھ کو روس کے وزیر خارجہ سرگئی لاوروف سے عالمی منڈیوں میں یوکرین کا گندم  اور اسی طرح روسی کھاد پہنچائے جانے کے بارے میں گفتگو کی ہے۔

دریں اثنا روس کے دفتر خارجہ کی ترجمان نے کہا ہے کہ روس، یوکرینی گندم کی برآمدات میں رکاوٹ نہیں ہے اور  مغرب کی پابندیاں ختم کئے جانے کی صورت میں لاکھوں ٹن گندم پوری دنیا کو برآمد کیا جا سکتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ روس کی جانب سے گندم کی برآمدات کا محفوظ راستہ فراہم کیا جا رہا ہے اور یورپ کو اگر قحط کی تشویش ہے تو پابندیاں ہٹائے تاکہ پوری دنیا کو وسیع پیمانے پر گندم فراہم کیا جا سکے۔

روسی وزارت خارجہ کی ترجمان زاخارووا نے کہا کہ یورپ و امریکہ اس سلسلے میں روس کو ذمہ دار قرار دینے کی کوشش کر رہے ہیں جبکہ وہ خود پابندیاں عائد کر کے دنیا میں غذائی اشیا کی برآمدات میں رکاوٹ کا باعث بنے ہوئے ہیں

یہ بھی دیکھیں

دشمن نیویارک میں ایرانی قوم کی آواز کو دبانے میں ناکام رہا:ایرانی صدر

تہران:ایرانی صدر آیت اللہ سید ابراہیم رئیسی نے کہا کہ دشمنوں نے سرتوڑ کوشش کی …