بدھ , 28 ستمبر 2022

مغربی ممالک کے جدید و پیچیدہ ترین ہتھیار بلیک مارکیٹ میں

امریکہ اور مغربی ممالک کی جانب سے یوکرین کو دیئے جانے والے ہلکے اور بھاری ہتھیار بلیک مارکیٹ میں فروخت کئے جارہے ہیں۔

 رشاٹوڈے نیوز چینل نے رپورٹ دی ہے کہ یوکرین جنگ کے دوران مغربی ممالک کی جانب سے یوکرین کو دیئے جانے والے مہلک ہتھیاروں کی بنا پر ہتھیاروں کی خرید و فروخت کی بلیک منڈی وجود میں آگئی ہے۔

اس رپورٹ کے مطابق یوکرینیوں نے اس غیرقانونی منڈی میں نہ صرف ہلکے ہتھیار بلکہ پیچیدہ قسم کے سافٹ ویئر منجملہ جولین اینٹی ٹینک سسٹم ، جدید نسل کے این ایل اے ڈبیلو اینٹی ٹینک سسٹم ، دھماکا کرنے والے فونیکس گوست ڈرون اور دیگر بہت سے فوجی ساز و سامان بھی پہنچا دیئےہیں۔

انٹرپول کے سربراہ یورگن اسٹاک، جون دوہزار بائیس میں بلیک منڈی میں مغرب کے جدید ترین ہتھیاروں کے  پہنچنے کے سلسلے میں خبردار کرچکے ہیں۔

  روس، مغربی ممالک کو یوکرین کومسلح کرنے ، انسانی حقوق کی خلاف ورزی اور مشرقی یوکرین میں روسی نژاد باشندوں پر یوکرینی فوجیوں کے حملوں کے بارے میں اب تک بارہا انتباہ دے چکا ہے۔

مغربی ممالک بالخصوص امریکہ، حالیہ برسوں میں یوکرین حکومت کی بڑے پیمانے پر مالی و فوجی مدد کرتا رہا ہے اور جنگ شروع ہونے کے بعد سے اپنے زرخرید جنگجو بھی بھیجنا شروع کردیے ہیں جس کا سلسلہ اب بھی جاری ہے۔

یہ بھی دیکھیں

بی بی سی کی کارستانیاں

(تحریر: ڈاکٹر راشد عباس نقوی) ملکہ برطانیہ کی موت کے بعد ہم نے میڈیا اور …