پیر , 26 ستمبر 2022

صیہونی ریاست شہداء کی لاشوں کو لیبارٹریوں میں استعمال کر رہی ہے

تہران، فلسطین کے وزیر اعظم محمد اشتیہ نے کہا ہے کہ صہیونی ریاست فلسطینی شہدا کی لاشوں کو میڈیکل یونیورسٹی کی لیبارٹریوں میں استعمال کر رہی ہے۔

اناطولیہ خبر رساں ایجنسی کے حوالے سے محمد اشتیہ نے کہا کہ  فلسطینی عوام کے خلاف غاصب صہیونی ریاست کے جرائم کی کوئی انتہا نہیں ہے اور اس سال کے آغاز سے اب تک 78 فلسطینیوں کو شہید کیا ہے جن شہداء میں سے 15 بچے تھے۔

انہوں نے کہا کہ صہیونی ریاست شہداء کی لاشوں کو ضبط کر کے اور یرغمال بنانے کے ساتھ ان شہدا کے اہل خانہ کے دکھ اور تکلیف کو دوگنا کرتی ہے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ اس غاصب حکومت ان لاشوں کو میڈیکل یونیورسٹی کی لیبارٹریوں میں استعمال کرتی ہے جو یہ انسانی حقوق اور اخلاقی و سائنسی اقداروں کے خلاف ہے۔

محمد اشتیہ نے عالمی یونیورسٹیوں سے مطالبہ کیا کہ وہ فلسطینی شہداء کی لاشوں کو ضبط کرنے میں ملوث یونیورسٹیوں کے ساتھ تعاون کرنے سے گریز کریں۔

انہوں نے ان یونیورسٹیوں سے مطالبہ کیا کہ ان لاشوں کی بے حرمتی کے روکنے کیلیے اس حکومت پر ڈباو ڈالیں۔

یہ بھی دیکھیں

مسلمانوں میں لڑائی جھگڑے،اختلافات کا خاتمہ ہونا چاہیے: مقتدیٰ صدر

بغداد:عراق کے مذہبی اور سیاسی رہنما مقتدی صدر نے مسلمانوں میں لڑائی جھگڑے ، جنگ …