بدھ , 17 اگست 2022
تازہ ترین

نیند کی کمی نوجوانوں میں ڈپریشن کا خطرہ بڑھانے کا باعث

نیند کے مسائل نوجوانوں میں ڈپریشن کا باعث بن سکتے ہیں۔

یہ بات آسٹریلیا میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آئی۔

فلینڈرز یونیورسٹی کی تحقیق میں بتایا گیا کہ نوجوانی میں نیند کا کم دورانیہ، جسمانی گھڑی کے افعال میں مداخلت اور سونے کی کوشش کے دوران منفی خیالوں کا غلبہ سب ڈپریشن کا باعث بننے والے عناصر ہیں

تحقیق کے مطابق مشرقی اور مغربی معاشروں میں نوجوان بہت زیادہ دیر سے سوتے ہیں اور ان کی نیند کا دورانیہ مختصر ہوتا ہے۔

محققین نے بتایا کہ سب سے پہلے تو دن میں غنودگی طاری ہوتی ہے جس سے رات کو سونے میں مشکلات کا سامنا ہوتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ رات گئے سونے اور صبح جلد اٹھنے کے نتیجے میں ڈپریشن کی علامات کی شدت میں اضافہ ہوتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ بستر پر لیٹ کر کروٹیں بدلنے سے جسمانی گھڑی کے افعال پر منفی اثرات مرتب ہوتے ہیں اور یہ بھی ڈپریشن کا خطرہ بڑھاتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ نیند اور ڈپریشن کے درمیان تعلق کے لیے مزید تحقیق کی ضرورت ہے جس سے ڈپریشن کی روک تھام کے لیے زیادہ مؤثر حکمت عملیوں کو ترتیب دینے میں بھی مدد ملے گی۔

انہوں نے مزید کہا کہ گھر والوں کو نوجوانوں کی نیند اور ذہنی صحت کے لیے معاونت فراہم کرنی چاہیے اور ان کے نیند کا وقت طے کرکے اس پر عمل کرانا چاہیے۔

اس تحقیق کے نتائج نیچر ریویوز سائیکولوجی میں شائع ہوئے۔

یہ بھی دیکھیں

بارشوں اور سیلاب سے افغانستان میں 32 افراد جانبحق۔

کابل:افغانستان کے صوبے پروان میں شدید بارشوں کے باعث سیلاب سے 32 افراد جانبحق اور …