بدھ , 30 نومبر 2022

یوکرین زاپروژیا ایٹمی بجلی گھر کے معائنے میں رکاوٹ

حکومت یوکرین عالمی معائنہ کاروں کو زاپروژیا کے ایٹمی بجلی گھر کے معائنے کی اجازت نہیں دے رہی۔

 اس بات کا انکشاف زاپروژیا شہر کے ایک مقامی عہدیدار ولادیمر روگوف نے اپنے ایک پریس بیان میں کیا ہے۔ زاپروژیا کی فوجی سول کونسل کے رکن ولادیمیر روگوف کا کہنا ہے کہ حکومت یوکرین کو اس بات کا خوف لاحق ہے کہ اس بجلی گھر کی باضابطہ عالمی معائنہ کاری کی صورت میں یوکرینی ملیشیاؤں کے لیے ایٹم بم بنانے کا معاملہ سامنے آ سکتا ہے۔
انہوں نے کہا کہ یوکرینی فوج نے زاپروژیا کے علاقے پر حملے کرنے کی کوشش بھی کی ہے جو ناکام رہی۔
واضح رہے کہ یورپ کا سب سے بڑا ایٹمی بجلی گھر زاپروژیا میں واقع ہے جو یوکرین کو درکار ایک تہائی بجلی پیدا کرتا ہے۔ مارچ دوہزار بائیس میں روس نے اس بجلی گھر کو اپنے کنٹرول میں لے لیا تھا۔


 

 

یہ بھی دیکھیں

سپاہ پاسداران نے جنوبی علاقے میں ایک عرب انٹیلی جنس سروس کی سازشوں کو بے نقاب کیا

تہران:سپاہ پاسداران انقلاب نے ایک ایک رجعت پسند عرب انٹیلی جنس سروس کے ایک ایجنٹ …