بدھ , 10 اگست 2022
تازہ ترین

سیاسی قوتوں اور شراکت داروں کا مذاکرات کی میز پر بیٹھنے سے ملک میں سیاسی تعطل کا خاتمہ ہوگا۔سید عمار حکیم

بغداد : حکمت  پارٹی کے سربراہ سید عمار حکیم نے وزیر اعظم مصطفیٰ الکاظمی کی قومی مکالمے کی تجویز کی حمایت کردی۔ ایک بیان میں سید عمار حکیم نے کہا کہ عراق کا اندرونی منظر جس حساس صورتحال کا سامنا کر رہا ہے اس سے ہر ایک کو ترجیح دینا ضروری ہو گیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اسی بنیاد پر، دیانتداری اور خالص نیت کے ساتھ، ہم اپنے بھائیوں سے کہتے ہیں کہ وہ براہ راست اور غیر محدود مذاکرات شروع کریں اور ملک اور قومی مفادات اور تحفظ کے دائرہ کار میں ایک دوسرے کے ساتھ مفاہمت تک پہنچیں۔ ایک قومی عملی اقدام تک پہنچنے کے لیے سیاسی قوتوں اور شراکت داروں کا مذاکرات کی میز پر بیٹھنے سے ملک میں سیاسی تعطل کا خاتمہ ہو گا۔ انہوں نے تمام مظاہرین سے بھی مطالبہ کیا کہ وہ اپنے احتجاج کو پرامن رکھیں اور حکومتی اداروں کا احترام کریں، انہیں خالی کریں، سرکاری اور نجی املاک کی حفاظت کریں، قانون نافذ کرنے والے اداروں کے ساتھ تعاون کریں، اور قانون شکنی سے باز رہیں۔

یہ بھی دیکھیں

آخر او آئی سی کو مظلوم فلسطینی یاد آ ہی گئے۔!

اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) نے فلسطینی علاقوں پر اسرائیلی حملوں کی مذمت کی …