بدھ , 17 اگست 2022
تازہ ترین

فرانس نے حجاب پرپابندی عاید کرکےبین الاقوامی حقوق کے معاہدے کی خلاف ورزی کی ہے۔اقوام متحدہ

واشنگٹن: اقوام متحدہ کی ایک کمیٹی نے اپنے فیصلے میں کہاہے کہ فرانس نے ایک خاتون پرحجاب پہننے پرپابندی عاید کرکے بین الاقوامی حقوق کے معاہدے کی خلاف ورزی کا ارتکاب کیا ہے۔فرانس میں اس خاتون پرسرپوش اوڑھنے کی بنا پر ایک تربیتی کورس کے دوران میں اسکول میں داخلے پرپابندی عاید کردی گئی تھی۔

اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کمیٹی نے کہا کہ اس اقدام سے شہری اورسیاسی حقوق سے متعلق بین الاقوامی معاہدے کی خلاف ورزی ہوئی ہے اور فرانسیسی اسکول نے ایک طرح سے اس معاہدے کو توڑ دیا ہے۔ کمیٹی نے یہ فیصلہ 2016 میں ایک فرانسیسی شہری کی دائرکردہ شکایت پرجاری کیا ہے۔

یہ خاتون 2010 میں بالغوں کے لیے ایک پیشہ ورانہ تربیتی کورس میں شریک ہونا چاہتی تھیں۔انھوں نے اس کورس کے لیے انٹرویو اور داخلہ کاامتحان پاس کیا تھا۔ خاتون حجاب کرنے کی وجہ سے اسکول میں داخلے پرپابندی عاید کردی گئی تھی
اقوام متحدہ کی کمیٹی نے کہا کہ ’’خاتون کو سرپوش (ہیڈ اسکارف) پہنتے ہوئے اپنے جاری تعلیمی کورس میں شرکت سے منع کرنامعاہدے کی خلاف ورزی ہے۔اس کے علاوہ یہ ان کے مذہب کی آزادی کے حق پربھی پابندی ہے۔اقوام متحدہ کی کمیٹی نے یہ فیصلہ مارچ میں منظورکیاتھا لیکن اسے بدھ کے روز خاتون کے وکیل کوبھیجا گیاہے۔ان کے وکیل سیفین گوئزگوئز نے اے ایف پی کوبتایا کہ ’’یہ ایک اہم فیصلہ ہے جس سے ظاہرہوتا ہے کہ فرانس کوانسانی حقوق ،خاص طورپرمذہبی اقلیتوں اور بالخصوص مسلم کمیونٹی کے حقوق کے احترام کے معاملے میں کام کرنےکی ضرورت ہے‘‘۔

یہ بھی دیکھیں

بارشوں اور سیلاب سے افغانستان میں 32 افراد جانبحق۔

کابل:افغانستان کے صوبے پروان میں شدید بارشوں کے باعث سیلاب سے 32 افراد جانبحق اور …